سیاست

2,000 کروڑ روپے بچانے کیلئے یکرپشن کی حمایت میں کانگریس کا ’ستیہ گرہ ‘ مارچ : بی جے پی

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Mosherraf-13 June

نئی دہلی، 13 جون:بی جے پی نے پیر کو منی لانڈرنگ کیس میںای ڈی کے سامنے کانگریس لیڈر راہل گاندھی کی پیشی کے دوران پارٹی رہنماؤں اور کارکنوں کے ذریعہ مارچ اور ستیہ گرہ کیا۔ تحقیقاتی ایجنسی پر کھلے عام دباؤ ڈالنے کا کانگریس کا ’ہتھکنڈہ‘ قرار دیا۔ بی جے پی نے الزام لگایا کہ کرپشن کی حمایت میں منعقد ہونے والے اس پروگرام کا مقصد گاندھی خاندان کے 2,000 کروڑ روپے کے اثاثوں کو بچانا ہے۔بی جے پی ہیڈکوارٹر میں منعقدہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مرکزی وزیر اسمرتی ایرانی نے بھی کہا کہ کوئی بھی قانون سے بالاتر نہیں ہے۔ راہل گاندھی بھی نہیں۔راہل گاندھی آج نیشنل ہیرالڈ-ایسوسی ایٹڈ جرنلز لمیٹڈ سودے سے متعلق منی لانڈرنگ کیس میں ای ڈی کے سامنے پیش ہوئے۔ اس دوران پارٹی کے کئی سرکردہ لیڈران، ممبران پارلیمنٹ اور عہدیداروں نے دہلی میں ای ڈی کے ہیڈکوارٹر تک احتجاجی مارچ نکالا اور ’ستیہ گرہ‘ کا اہتمام کیا۔ایرانی نے کہا کہ آپ کانگریس کی اس حکمت عملی کو کیا نام دیں گے کہ ایک تحقیقاتی ایجنسی پر کھلے عام دباؤ ڈالا جارہا ہے؟ راہل گاندھی کو بدعنوانی کے معاملات پر طلب کیا گیا ہے۔ مرکزی وزیر نے کہا کہ کانگریس کی حکومت والی ریاستوں کے سینئر لیڈروں کو خصوصی طور پر دہلی مدعو کیا گیا ہے تاکہ تحقیقاتی ایجنسی پر دباؤ ڈالا جا سکے۔راہل گاندھی کی کال پر آج کانگریس کے لیڈر اور کارکنان جو تعطل پیدا کر رہے ہیں، میں ملک کو بتانا چاہوں گا کہ یہ جمہوریت کو بچانے کی کوشش نہیں ہے۔ یہ راہل گاندھی اور گاندھی خاندان کے دو ہزار کروڑ روپے کے اثاثوں کو بچانے کی کوشش ہے۔انہوں نے کہا کہ اس قسم کا دباؤ کہاں تک جمہوریت اور آئین کا احترام ہے، اس کا جواب گاندھی خاندان کو دینا چاہیے۔

About the author

Taasir Newspaper