دنیا بھر سے

عازمین حج کے لیے فریکونسی ٹرانس میشن سروس کیا ہے؟

Written by Taasir Newspaper

ریاض،3جولائی -مکہ مکرمہ میں جنرل آٹوموبائل سنڈیکیٹ نے کہا ہے کہ فریکوئنسی ٹرانس میشن یونین سے نکلنے والے اہم جدید آپریشنل پیٹرن میں سے ایک ہے، جسے مشاعر پیٹرن کہا جاتا ہے جو حج کے نظام کے ساتھ مربوط ہے۔ اسے ہر سال صرف حج کے موقعہ پر ایک ہی وقت میں اس کو چالو کیا جاتا ہے۔اپنے بیان کے مطابق یونین نے کہا کہ فریکوئنسی ٹرانسپورٹ کی تعریف ایک دو ٹریک والی لائن کے طور پر کی گئی ہے جو عازمین کے شہر کے اندر بسوں کے لیے مختص ہے۔ اس میں چھوٹی گاڑیاں نہیں چلتیں اور دنیا بھر کے عازمین حج کو 6 رومنگ کمپنیوں میں تقسیم کیا گیا ان میں سے چار کمپنیوں نے مقدس مقامات کے اندر فریکوئنسی ٹرانسپورٹ کے تحت کام شروع کیا ہے۔
منظور شدہ فریکوئنسی ٹرانسپورٹ میکانزم کے بارے میں یونین نے کہا کہ یہ ٹرانسپورٹ کمپنیوں سے بسیں وصول کرنا اور انہیں واپس پارکنگ میں کھڑا کرنا۔ پھر انہیں طے شدہ شیڈول کے مطابق چلایا جاتا ہے۔ ضیوف الرحمان کی درخواسوں کے مطابق اور انہیں یونین کے نگرانوں کے ذریعہ طوافہ کمپنیوں میں تقسیم کیا جاتا ہے۔پہلی قسم کی فریکوئنسی کے پانچ مراحل ہوتے ہیں، جو فوری طور پر پرفیوڑن، بڑھنے اور آگے جانے کا مرحلہ ہوتے ہیں۔جہاں تک دوسری قسم کی دو طرفہ پروازوں کا تعلق ہے تو یہ داخلی سفر ہے جسے قافلہ کہا جاتا ہے اور اس دوران 3 سے 9 سے زیادہ مناسک ادا کیے جا سکتے ہیں۔جبکہ بسوں کا مشن مقدس مقامات کے اندر بس ڈپو سے مقدس مقامات تک ہے۔ اس کے برعکس یہ 3 دوروں پر ہے۔ پہلا سفر ترویہ کے روز حجاج کرام کو بیت اللہ تک منتقل کرنا اور منیٰ سے مقام عرفات تک لے جانا ہے۔ جب کہ دوسرا سفر افافضہ اولیٰ ہے اور عرفات کے مقام سے مزدلفہ تک ہے۔ تیسرا سفر قافلے کی قسم میں ہے، جو کہ’افاضہ ثانیہ‘ کے لیے ہے۔ اس میں حجاج کرام کو منیٰ سے مزدفلہ تک لے جانا ہے۔حج کے موسم سے پہلے جنرل آٹوموبائل سنڈیکیٹ میں تعدد کی آپریشنل تیاری کے بارے میں انہوں نے وضاحت کی کہ یہ گشت کو برقرار رکھنے، گوداموں سے منسلک ورکشاپس کی کارکردگی اور الیکٹرانک سسٹمز کی کارکردگی کو یقینی بنا کر کیا جاتا ہے۔دریںاثنا حج و عمرہ چیری ٹیبل سوسائٹی[ھدیہ] نے اس سال 1443ھ کے حج سیزن کے کام میں حصہ لیتے ہوئے حجاج کرام کے سفر اور راستے سے لے کر الوداع تک فراہم کیے جانے والے پروگراموں اور خدمات کے ایک پیکیج کا اعلان کیا ہے۔ اس پیکیج میں عازمین حج کے لیے کھانے پینے کی اشیا، روح کی غذا، مہمان نوازی، دیکھ بھال اور ایجنسیوں کی سروسز شامل ہیں۔’ہدایہ‘سوسائٹی کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر انجینئر احسان الریس نے وضاحت کی کہ ’ہدیہ سوسائٹی وزارت حج و عمرہ کی نگرانی میں کام کر رہی ہے، تاکہ حجاج کرام کے لیے آمد سے لے کر الوداع تک متعدد رابطہ مقامات کا احاطہ کیا جا سکے۔ یوم ترویہ سے قبل حاجیوں کی آمد کے مقامات، زمینی بندرگاہوں۔
، جدہ اسلامی بندرگاہ اور مکہ المکرمہ اور مدینہ منورہ کے مقامات پر سوسائٹی کی ٹیمیں موجود ہیں۔ عرفات، مزدلفہ میں مقدس مقامات پرحجاج کرام میں تحائف تقسیم کیے جائیں گے۔ایام تشریق کے بعد منیٰ،مکہ مکرمہ اور المدینہ منورہ میں وزارت حج و عمرہ کے عازمین کے گروپ بندی کے مراکز میں بھی تحائف تقسیم کیے جائیں گے۔الریس نے کہا کہ ھدیہ کا مقصد مختلف قسم کی خدمات فراہم کرنا ہے، جن میں رہ نمائی اور ہدایت کے ساتھ روحانی غذائیت سے متعلق خدمات شامل ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ ہلکی پھلکی پکی کھانے کی چیزیں، پانی کی بوتلیں،زمزم کے پانی کے پیکج اور صحت مند پانی اور دیگر سروسز شامل ہیں۔

 

About the author

Taasir Newspaper