ملک بھر سے

مختار انصاری کے بیٹے عباس انصاری کی عبوری ضمانت کی درخواست مسترد

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 5th Aug

لکھنؤ5، اگست: یوپی کے قدآور لیڈر مختار انصاری کے ایم ایل اے بیٹے عباس انصاری کی ضمانت قبل از گرفتاری (عبوری ضمانت) کی درخواست ایم پی-ایم ایل اے کی خصوصی سیشن عدالت نے جمعرات کے روز مسترد کر دی ہے۔ مختارانصاری کے بیٹے عباس انصاری پر الزام ہے کہ انہوں نے بغیر اطلاع دئے سال 2012 میں لکھنؤ سے جاری ہونے والے اسلحہ لائسنس کو دہلی کے پتے پر منتقل کرا لیا۔رپورٹ کے مطابق خصوصی جج ہربنس نارائن نے اپنے حکم میں کہا کہ ملزم عباس انصاری کے خلاف پہلے سے ہی فوجداری مقدمات درج ہیں اور اسلحہ لائسنس کیس میں وارنٹ گرفتاری بھی 14 جولائی کو جاری کیے گئے ہیں، جس کی وجہ سے درخواست قبول نہیں کی جا سکتی ہے اور ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست مسترد کی جاتی ہے۔خیال رہے کہ 12 اکتوبر 2019 کو لکھنؤ کے مہانگر پولیس اسٹیشن میں عباس انصاری کے خلاف ایف آئی آر درج کی گئی تھی اور تفتیش کے دوران ان کے پاس سے ریوالور، میگزین اور کارتوس برآمد ہوئے تھے۔ جس کے بعد میٹروپولیٹن پولیس نے آرمز ایکٹ کی دفعہ 467، 468، 471، 420 اور دفعہ 30 کے تحت چارج شیٹ داخل کی تھی۔غلط طریقہ سے اسلحہ کی منتقلی کے اس معاملے میں لکھنؤ کی ایک عدالت نے عباس انصاری کے خلاف غیر ضمانتی وارنٹ بھی جاری کیا تھا۔ اس کے بعد لکھنؤ سے کئی ٹیمیں بنا کر پولیس عباس انصاری کی گرفتاری کے لیے ریاست کے کئی اضلاع میں چھاپے مار رہی ہے۔

About the author

Taasir Newspaper