Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

ریاست

بہار شریف میں اعلیٰ حضرت کا عرس منایا گیا

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 23rd Sept

بہار شریف23؍ستمبر(محمددانش)شہر بہار شریف میں چودھویں صدی کے مجدد عاشق رسول اعلیٰ حضرت امام احمد رضا خاں فاضلِ بریلوی رحمۃ اللہ علیہ کا عرس جوش و خروش کے ساتھ منایا گیا۔ بہار شریف کے مدرسہ اصدقیہ مخدوم شرف میں بعد نماز جمعہ قرآن خوانی، اور اس کے بعد اعلیٰ حضرت کے نعتیہ کلام مدرسہ کے بچوں نے بہترین انداز میں پڑھا اس کے بعد مدرسہ اصدقیہ مخدوم شرف کے مہتمم سید نورالدین اصدق مصباحی چشتی نے اعلیٰ حضرت کے بارے میں معلوماتی مختصر گفتگو کی، انہوں نے کہا کہ اعلیٰ حضرت علوم و فنون کے بادشاہ تھے۔ وہ محتاج تعارف نہیں۔ انہوں نے علم دین پر بڑا کام کیا۔ سینکڑوں کتابیں لکھی۔ جس سے دنیا آج بھی مستفیض ہورہی ہے۔ اس کے بعد دو بجکر اڑتیس منٹ پر قل کا اہتمام کیا گیا۔وہیں دوسری طرف شہر کے بسار بیگہ میں بھی بعد نماز جمعہ عرس اعلیٰ حضرت کا اہتمام کیا گیا اس محفل میں محلہ بسار بیگہ کے بوڑھے، بچے، نوجوان تمام لوگوں نے شرکت کی۔ بسار بیگہ مسجد کے صدر جناب حاجی محمد مصباح الدین صاحب نے بہترین انداز میں اعلیٰ حضرت کے لکھے ہوئے نعتیہ کلام کے چند اشعار پڑھے جس سن کر اہل محفل جھوم اٹھے اس کے بعد مولانا طارق انور بھاگلپوری نے بہترین انداز میں اعلیٰ حضرت اور عشق رسول پر خطاب کیا۔ انہوں نے کہا کہ اعلیٰ حضرت کو اپنے بیگانے تمام لوگ مانتے تھے۔ آج بھی ان کے فتاویٰ ان کا علم پوری دنیا کے لوگ تسلیم کرتے ہیں۔ اور آخر میں دونوں جگہ درود و سلام پر محفل اختتام کو پہنچا۔اس موقع پر حافظ و قاری محمد توصیف عالم اصدقی پکی تالاب معلم مدرسہ فردوسیہ بڑی درگاہ، مولانا کرامت حسین امام مسجد بسار بیگھ، مولانا محمود عالم مصباحی اصدقی صدرِ المدرسین مدرسہ اصدقیہ، حافظ و قاری محمد نور عالم معلم مدرسہ اصدقیہ، مولانا محفوظ صدف بھاگلپوری مدرسہ اصدقیہ، مولانا خواجہ اکرام مصباحی مدرسہ اصدقیہ، حافظ محمد نظام الدین اصدقی، سید غزالی اصدق، اس پروگرام میں محلوں کے لوگوں نے بھی شرکت کی۔

About the author

Taasir Newspaper