Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

آرٹیکل ملک بھر سے

پی ایم گتی شکتی – نیشنل ماسٹر پلان: ملک میں بنیادی ساختیاتی ترقی

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 18th Sept

 

 

 

 

جناب نتن گڈکری

ہندوستان کے وزیر اعظم کی حیثیت سے 2014 میں نریندر مودی جی نے جب سے ایک ایسا خود کفیل ملک بنانے کے لئے اپنے سفر کا آغاز کیا جہاں سماج کے تمام طبقات کو بنیادی سہولتوں تک رسائی حاصل ہو، تب سے ترقی کی رفتار اور پیمانہ دونوں ایک نئے ابھرتے ہوئے ہندوستان کی پہچان بن گئے ہیں۔ کارکردگی کی موثریت، شفافیت، تیزی اورخدمات کی احسن طور پر آخری منزل تک ترسیل کے کلچر کو فروغ دینے میں کافی حد تک کامیاب ہونے کے بعد یہ حکومت مختلف مرکزی وزارتوں اور ریاستی حکومتوں کے درمیان بہتر تال میل اور ہم آہنگی اور “سب کا ساتھ، سب کا وکاس” اور 2024-25 تک ہندوستان کو 5 ٹریلین ڈالر کی معیشت بنانے کے تصور کے ساتھ بہت زیادہ بلندیوں تک پہنچنا چاہتی ہے۔ عزت مآب وزیر اعظم نے 2021 میں ‘پی ایم گتی شکتی نیشنل ماسٹر پلان’ کا آغاز کیا۔ انفراسٹرکچر سیکٹر کی ’گتی‘ کو ایک نئے ہندوستان کی تعمیر کے لئے بڑی ’شکتی‘ دی جانی ہے۔ وزیر اعظم نے کہا تھا کہ “آتم نر بھر بھارت کے عزم کے ساتھ اگلے 25 برسوں کے لئے ہندوستان کی بنیاد رکھی جا رہی ہے… ہم نے پروجیکٹوں کو وقت پر مکمل کرنے کا نہ صرف ورک کلچر تیار کیا ہے بلکہ کوششیں کی جا رہی ہیں کہ پروجیکٹوں کو وقت سے پہلے مکمل کیا جائے”۔
اس سے یہ بھی ظاہر ہوتا ہے کہ ہندوستان کس طرح عالمی وبا کے جغرافیائی سیاسی بحران کے آزمائشی دور کا مقابلہ کرنے کے بعد، جس نے ملک میں تمام ترقیاتی سرگرمیوں کو متاثر کیا، تیزی سے پیش قدمی کرنے کے لئے پرعزم رہا ۔
اس ماسٹر پلان کا مقصد جیسا کہ وزیر اعظم نے تصور کیا تھا اگلے 25 برسوں میں ہندوستان کو ایک ترقییافتہ ملک بنانا ہے۔ یہ بنیادی طور پر ایک ڈیجیٹل پلیٹ فارم ہے جو میری نقل و حمل اور شاہ راہوں کی وزارت سمیت 16 مرکزی وزارتوں کو ایک مربوط منصوبہ بندیکے ساتھ بنیادیساختیاتی ارتباط کے منصوبوں کو مربوط طور پرنافذ کرنے کے لئےیکجا کرتا ہے تاکہ ملک کے مختلف حصوں، خاص طور پر تمام امنگوں بھرے اضلاع، قبائلی پٹیوں، پہاڑی علاقوں اور شمال مشرقی خطے میں ایک جامع اور ہمہ جہت سماجی و اقتصادی ترقی عمل میں آ سکے۔
سابقہ کچھ برسوں میں حکومت نے ایک جامع نقطہ نظر کے ذریعے بنیادی ساختیات پر بے نظیر توجہ کو یقینی بنایا ہے۔ بڑے بنیادی ساختیاتی پروجیکٹوں کے ذمہ داران کے لئے جامع منصوبہ بندی کے ذریعے ماضی کے مسائل کو حل کرنے میںاس سے مدد ملی ہے۔ الگ الگ منصوبہ بندی اور ڈیزائننگ کے بجائے اس قومی ماسٹر پلان کے تحت پروجیکٹوں کو ایک ہی پلیٹ فارم پر مشترکہ وژن کے ساتھ ڈیزائن اور ان پر عملدرآمد کیا جائے گا۔
نقل و حمل اور شاہ راہوں کی وزارت نےاس نیشنل ماسٹر پلان کے تحت ملک بھر میں جدید ترین ملٹی ماڈل انفراسٹرکچر کی تعمیر کی رفتار کو آگے بڑھاتے ہوئے اہم پیش رفت کی ہے۔عزت مآب وزیر اعظم نے ہمیشہ کابینہ کے سامنے میری مختلف پیشکشوں کی قدر و قیمت میں اضافہ کیا ہے اور اختراعی خیالات پیش کئے ہیں۔ وہ مسلسل نگرانی کرتے ہیں اور کچھ انتہائی باوقار پروجیکٹوں کے معاملے میں تو ذاتی طور پر پیش رفت کی نگرانی بھی کرتے ہیں اور تمام ذمہ داران خاص طور پر افرادی قوت کی اُن کے قابل قدر تعاون کے لئے حوصلہ افزائی کرتے ہیں۔
ایسی ہی ایک تقریب جہاں وزیر اعظم مودی نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے سنگ بنیاد رکھا وہ دو روڈ پروجیکٹ تھے جن کا مقصد میری آبائی ریاست مہاراشٹر کے مندروں کے شہر پنڈھار پور سے رابطے کو بہتر بنانا تھا۔ انہوں نے شری سنت دنیشور مہاراج پالکھی مارگ کے پانچ سیکشنوں کی چار قطاروں اور شری سنت تُکا رام مہاراج پالکھی مارگ کے تین سیکشنوں کا سنگ بنیاد رکھا تھا۔
آئیے دیکھیں وہ کس طرح ربط بناتے ہیں۔ انہوں نے “میرے مزدور بھائیوں” سے تین چیزیں آشیرواد کے طور پر طلب کیں۔ – شاہراہوں کے ساتھ اورپیدل چلنے والے راستوں کے ساتھ درخت لگائیں، سڑکوں کے ساتھ مخصوص فاصلے پر پینے کے پانی کا انتظام کیا جائے اور پندھار پور کو زیارت کیلئے ہندوستان کا سب سے صاف مقام بنائیں۔ عزت مآب وزیر اعظم کے ترقی رُخی خیال کے دو اہم پہلو ہیں – جدیدیت کے ساتھ ثقافتی اور تہذیبی ورثے کی تجدید۔
ہمارا بھارت مالا پریوجنا پروگرام نہ صرف ایک قابل بنانے والا پروگرام ہے بلکہوزیر اعظم کے دیگر اہم اقدامات جیسے ساگرمالا، صرف مال برداری کی راہداریوں، نیشنل لاجسٹکس پالیسی اور صنعتی راہداریوں، اُڑان-آر سی ایس، بھارت نیٹ، ڈیجیٹل انڈیا، پاروتمالا اور میک ان انڈیا سے مستفید بھی ہوتا ہے۔بھارت مالا پریوجنا پورے ملک میں شاہراہوں کے نئے پروجیکٹوں کی تعمیر کے لئے مرکزکی اعانت سے اہم ترین پروگرام ہے۔ اس میں قبائلی اور پسماندہ علاقوں سمیت دور دراز کے سرحدی اور دیہی علاقوں کو رابطہ فراہم کرنے پر خصوصی زور دیا گیا ہے۔
نیشنل ہائی ویز اتھاریٹی ااف انڈیا (این ایچ اے آئی) اور نیشنل ہائی ویز اینڈ انفرا اسٹرکچر ڈیولپمنٹ کارپوریشن (این ایچ آئی ڈی سی ایل) بھارت مالا پریوجنا کے حصے کے طور پر مختلف گرین فیلڈ ایکسپریس ویز اور 35 ملٹی ماڈل لاجسٹک پارکوں (ایم ایم ایل پیز) کو تیزیسے مکمل کر رہے ہیں۔
کچھ بڑے ایکسپریس ویز اور راہ داریاں جو تکمیل کے مراحل میں ہیں وہ دہلی – ممبئی ایکسپریس وے، احمد آباد – دھولیرا ایکسپریس وے، دہلی- امرتسر- کٹرا ایکسپریس وے، بنگلورو- چنئی ایکسپریس وے، امبالا- کوٹ پٹلی ایکسپریس وے، امرتسر- بھٹنڈا- جام نگر ایکسپریس وے، رائے پور- وی زیڈ جی ایکسپریس وے، حیدرآباد- وی زیڈ جی ایکسپریس وے، اربن ایکسٹینشن روڈ- دوئم، چنئی-سالِم ایکسپریس وے اور چتوڑ-تھاچر ایکسپریس وے ہیں۔
کچھ اہم بنیادی ساختیاتی پروجیکٹ جو ابھی تعمیر کے مختلف مراحل میں ہیں ان میں مشہور زوجیلا ٹنل اور زیڈ مورتھ شامل ہیں جو سری نگر اور لیہہ کو جوڑیں گے۔میری وزارت کے تحت سڑکوں اور شاہراہوں کی بنیادی ساختیات کی تمام بے مثال پیش رفت اور ترقی ہمارے وزیر اعظم کی قابل اور متحرک قیادت اور وژن کے بغیر ممکن نہیں تھی۔ جو چوبیسوں گھنٹے انتھک محنت کرتے ہیں اور جن کی کوششوں اور واضح رہنمائی سے ہمیں نئے ہندوستان کے ان کے وژن کو پورا کرنے کے لئے مسلسل ہدایت ملتی رہی ہے۔
ہمارے پیارے اور سب سے مقبول وزیر اعظم اس سنیچر کو 72 برس کے ہو گئے، ہم سب ان کے یوم پیدائش پر اپنی وزارت کی تمام ترقی اور پیش رفت کو ان کے اعزاز میں وقف کر کے اس دن کو منفرد انداز میں منانے کے لئے تیار ہیں۔
*************
مصنف جناب نتن گڈکری نقل و حمل اور شاہ راہوں کے مرکزی وزیر ہیں
PIB

About the author

Taasir Newspaper