Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

کھیل

ہندوستانی ٹیم آسٹریلیا کے خلاف دوسرا ٹی ٹوئنٹی جیت کر سیریز برابر کرنا چاہے گی

Written by Taasir Newspaper

تاثیر نیوزنیٹورک
محمد شاہنواز عالم،22؍ستمبر،2022

ہندوستانی کرکٹ ٹیم جب آسٹریلیا کے خلاف دوسرے ٹی ٹوئنٹی کے لیے ناگپور میں میدان میں اترے گی تو اس کا مقصد موہالی سے ہار کا بدلا لے کر سیریز برابر کرنا ہوگا۔بھارت اور آسٹریلیا کے درمیان دوسرا ٹی ٹوئنٹی جمعہ کو ناگپور میں کھیلا جائے گا۔ موہالی میں کھیلے گئے پہلے میچ میں آسٹریلیا کو چار وکٹوں سے شکست کے بعد تین میچوں کی سیریز میں فی الحال 1-0 کی برتری حاصل ہے۔ہندوستان کو اپنا پریکٹس سیشن شروع کرتے وقت بہت کچھ دیکھنا ہے۔ ایک آل راؤنڈر یونٹ کے طور پرویسٹ میں تسلسل کی کمی نے ٹیم کو گزشتہ چند میچوں میں مایوس کیا ہے۔کے ایل راہل، کپتان روہت شرما اور وراٹ کوہلی کے ٹاپ آرڈر کو اکٹھے ہوئے کچھ عرصہ ہوا ہے۔ ان میں سے ایک یا دو کے ناکام ہونے اور دوسرے کے کلک کرنے کا پیٹرن باقاعدہ بنیاد پر چل رہا ہے ۔ ۔ اب وقت آگیا ہے کہ وہ اس بدقسمتی کے طرز کو درست کریں کیونکہ انہیں آئی سی سی T20 ورلڈ کپ 2022 سے قبل دو عالمی معیار کی ٹیموں آسٹریلیا اور جنوبی افریقہ کے خلاف کھیلنا ہے۔ہاردک پانڈیا اور سوریہ کمار یادو جیسے مڈل آرڈر کھلاڑیوں کی فارم اس سال ہندوستان کے لیے ایک اعزاز ہے اور وہ اسے جاری رکھنا چاہیں گے۔
ہندوستانی بالنگ نے گزشتہ چند میچوں میں ڈیتھ اوورز میں مایوس کیا ہے۔ یہ ہندوستان کے مفاد میں ہوگا کہ جسپریت بمراہ اس بار پیسر بھونیشور کمار پر دباؤ کو کم کرنے کے لیے پلیئنگ الیون میں جگہ بنائیں، جن کی ایشیا کپ 2022 کے بعد سے ڈیتھ اوورز میں ناکامیوں پر شدید تنقید کی جا رہی ہے۔ اسپنر یوجویندر چہل کی شرح اور وکٹوں کی کمی ایک اور تشویش کا موضوع ہے۔ ہرشل پٹیل کی واپسی مایوس کن تھی اور وہ دوسرے T20I میں اس کی تلافی کرنا چاہیں گے۔دوسری طرف آسٹریلیا کو ہندوستان سے زیادہ پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔ موہالی میں کھیلے گئے پہلے ٹی ٹوئنٹی کے دوران ان کے بلے بازوں نے 209 رن کے بڑے ہدف کا تعاقب کیا۔ ہندوستان کو آل راؤنڈر کیمرون گرین سے ہوشیار رہنا ہوگا، جنہوں نے ایک اوپنر کے طور پر اپنی پہلی چار گیندوں میں تجربہ کار امیش یادو کو چوکا لگا کر فوری اپنا اثر ڈالا اور 61 رن بنائے۔ وکٹ کیپر بلے باز میتھیو ویڈ اور نئے آنے والے بلے باز ٹم ڈیوڈ اپنی جارحانہ بلے بازی سے اتنے ہی سخت ہیں۔ اسٹیو اسمتھ، کپتان ایرون فنچ اور گلین میکسویل کے تجربے سے آسٹریلوی بیٹنگ یونٹ ناقابل شکست نظر آرہا ہے۔تاہم، آسٹریلوی ٹیم کی گیند بازی تھوڑی تشویشناک ہے کیونکہ پہلے ٹی ٹوئنٹی میں نیتھن ایلس کے علاوہ ہر باؤلر کا اکانومی ریٹ سات سے زیادہ تھا۔ آسٹریلوی گیند بازوں نے میچ کے آخری پانچ اوورز میں 67 رن دیے۔ مجموعی طور پر اس وقت آسٹریلیا کی واحد پریشانی ڈیتھ اوورز کی گیند بازی ہے۔دو اعلیٰ درجے کی ٹیموں کے ساتھ، شائقین کو بلاشبہ کرکٹ کے ایک اور شاندار کھیل سے لطف اندوز ہونے کا موقع ملے گا۔
دونوں ٹیمیں درج ذیل ہیں-ہندوستانی اسکواڈ: روہت شرما (کپتان)، کے ایل راہل (نائب کپتان)، وراٹ کوہلی، سوریہ کمار یادو، دیپک ہوڈا، رشبھ پنت (وکٹ کیپر)، دنیش کارتک (وکیٹ کیپر)، ہاردک پانڈیا، آر کے۔ اشون، یوجویندر چہل، اکسر پٹیل، بھونیشور کمار، ہرشل پٹیل، دیپک چاہر، جسپریت بمراہ، امیش یادو۔آسٹریلیا اسکواڈ: سین ایباٹ، ایشٹن ایگر، پیٹ کمنز، ٹم ڈیوڈ، ناتھن ایلس، ایرون فنچ(کپتان)، کیمرون گرین، جوش ہیزل ووڈ، جوش انگلیس، گلین میکسویل، کین رچرڈسن، ڈینیئل سیمس، اسٹیو اسمتھ، میتھیو ویڈ، ایڈم زمپا ۔

About the author

Taasir Newspaper