Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

بہار

سی اے اے، این آر سی، طلاق ثلاثہ کے خلاف سپریم کورٹ جائیں گے جے ڈی یو لیڈر غلام رسول بلیاوی

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – 22th Nov.

پٹنہ، 22 نومبر(تاثیر بیورو)۔ سی اے اے، این ا?ر سی اور طلاق ثلاثہ کے خلاف ادارہ شرعیہ قانونی لڑائی کی تیاری میں ہے۔ ادارہ شرعیہ اس کے خلاف سپریم کورٹ جا چکا ہے۔ سپریم کورٹ میں رٹ پٹیشن اور نظرثانی کی درخواست بھی دائر کی گئی ہے۔ ان تینوں مقدمات کی سماعت ا?ئندہ ماہ سپریم کورٹ میں ہونے والی ہے۔ اس کی لڑائی بہار سے شروع ہو رہی ہے۔ بہار کے جے ڈی یو کے بڑے مسلم لیڈر مولانا غلام رسول بلیاوی جو کہ مرکزی ادارہ شرعیہ کے قومی صدر بھی ہیں، وکلاء کے گروپ کے ساتھ 2 دسمبر کو سپریم کورٹ جانے کی تیاری کر رہے ہیں۔ جے ڈی یو لیڈرمولا نا غلام رسول بلیاوی نے کہا کہ ادارہ شرعیہ نے سپریم کورٹ میں سی اے اے اور این ا?ر سی کے خلاف ایک رٹ دائر کی ہے۔ یہ وہی سی اے اے اور این ا?ر سی ہے، جس کو لے کر پورے ملک کے مسلمانوں میں بے چینی ہے۔ مسلم اقلیتوں کو حکمرانوں اور سیکولر جماعتوں کی طرف سے جو اعتماد ہونا چاہیے، وہ نہیں ہو سکا۔ پھر میں نے فیصلہ کیا کہ ہمیں اپنی لڑائی لڑنی ہیں۔ پھر ادارہ شرعیہ نے سپریم کورٹ میں عرضی دائر کی ہے۔ جیسا کہ ہمارے وکیل نے بتایا کہ معاملے کی 2 دسمبر کو سماعت ہے۔ اس میں شامل ہو کر ہم اپنا موقف رکھیں گے۔ سابق رکن پارلیمنٹ رہ چکے مولانا بلیاوی نے مزید کہا کہ تین طلاق کا مسئلہ کیا ہے؟ فیصلہ ا?یا کہ اگر کوئی ایک ساتھ تین طلاق دیتا ہے تو طلاق نہیں ہوگی۔ پھر بھی 3 سال کی سزا ہو جائے گی۔ اس فیصلے کے بعد پورے ملک اور پوری دنیا کو کیا پیغام گیا؟ یہ الفاظ سے باہرکی چیز ہے۔ ہم نے اس فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں بھی رٹ دائر کی ہے۔ اسے نظر ثانی فائل کہتے ہیں۔ اس کی سماعت 6 دسمبر کو ہوگی۔ بلیاوی اپنے قیادت میں ایک بڑ ی تحریک شروع کرنے جارہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ 13 دسمبر کو مرکزی ادار شرعیہ کا بڑا جلوس نکلنے والا ہے۔ سی اے اے، این ا?ر سی اورطلاق ثلاثہ جیسے بڑے مسائل کو لیکر ایک بڑی تقریب کا انعقاد کیا جا رہا ہے۔ اس میں اقلیتوں کو بتایا جائے گا کہ ان کے حقوق کیا ہیں۔ کیا منصوبہ ہے۔ کیونکہ حکومت سے اعتماد ختم ہو چکا ہے۔ اس پروگرام میں مسلم اسکالرز اپنے خیالات پیش کریں گے۔ حالانکہ جب طلاق ثلاثہ بل لوک سبھا اور راجیہ سبھا میں پاس کیا جارہا تھا تو جے ڈی یو نے اس کی مخالفت کرتے ہوئے واک ا?و?ت کیا تھا لیکن جے ڈی یو کو یہ پتہ تھا کہ ان کے واک ا?و?ٹ سے بل نہیں گرنے والا ہے اور تین طلاق بل کو پوری اکثریت سے پاس کر دیا گیا تھا۔ حالانکہ جے ڈی یو اس وقت مرکز میں بھی بی جے پی کے ساتھ تھی اور بہار میں بی جے پی کے ساتھ مل کر حکومت چلا رہی تھی اور اس معاملے کو لے کر دونوں پارٹیوں میں زیادہ اختلاف نہیں تھا۔ وہیں جے ڈی یو لیڈر مولانا غلام رسول بلیاوی کے سی اے اے، این ا?ر سی اور طلاق ثلاثہ کے خلاف سپریم کورٹ جانے پر بی جے پی کے فائربرانڈ لیڈر ہری بھوشن ٹھاکر بچول نے کہا کہ جو ملک میں ہندوو?ں کی بات کرے گا، وہی ملک پر راج کرے گا۔ سی اے اے، این ا?ر سی اور طلاق ثلاثہ نافذ ہوگا۔ غزوہ ہند نہیں چلے گا۔ پھلواری شریف سے پی ایف ا?ئی کے لوگ پکڑے گئے ہیں۔ یہاں پھلواری شریف ماڈل چل رہا ہے۔

About the author

Taasir Newspaper