Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

کھیل

امیر قطر کے لیونل میسی کو خصوصی اعزاز دینے پر مغربی میڈیا کا نامناسب ردِعمل

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 20th Dec.

لندن، 20دسمبر: امیر قطر شیخ تمیم بن حمد الثانی کی جانب سے فیفا ورلڈ کپ کی فاتح ٹیم ارجنٹینا کے کپتان لیونل میسی کو خصوصی اعزاز سے نوازے جانے پر مغربی میڈیا کی جانب سے نامناسب ردِعمل سامنے آیا ہے۔امیرِ قطر نے دوحہ میں تیسری مرتبہ فٹ بال کا عالمی چمپئن بننے کے بعد ارجنٹینا کے کپتان لیونل میسی کو فیفا ورلڈ کپ کی ٹرافی اْٹھانے سے پہلے اعزازی طور پر قطر کا روایتی لباس پہنایا جسے’بِشت‘ کہا جاتا ہے۔ مغربی میڈیا اور مغربی ممالک کے بیشتر انٹرنیٹ صارفین نے یہ منظر دیکھنے کے بعد نامناسب ردِعمل کا اظہار کیا۔پہلے ہی فیفا ورلڈ کپ کے قطر میں انعقاد پر ناخوش مغربی میڈیا نے اپنی خبروں میں امیرِ قطر کے اس اقدام کو منفی رنگ دینے کی کوشش کی۔امیر قطر کے اس اقدام پر مغربی ممالک سے تعلق رکھنے والے صارفین کی جانب سے بھی سوشل میڈیا پر ایسے تبصرے کیے گئے جن میں نسل پرستی کا عنصر نمایاں ہے۔سوشل میڈیا پر امیرِ قطر کے اس اقدام کا دفاع کرنے کے لیے بھی صارفین کی بڑی تعداد موجود ہے۔ ترکیہ کے رہائشی ڈاکٹر عبداللہ معروف نامی ایک ٹوئٹر صارف نے اپنے ٹوئٹ میں لکھا ہے کہ یہ روایتی ’بِشت‘ قطر میں کسی بھی قابلِ احترام شخصیات کو اعزازی طور پر پہنایا جاتا ہے۔انہوں نے لکھا کہ میسی کو یہ بِشت پہنائے جانے کا مطلب ہے کہ وہ امیر قطر کے لیے ایک قابلِ احترام شخص ہیں۔ڈاکٹر عبداللہ معروف نے مغربی میڈیا پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ جاہل مغربی میڈیا کو ہمیشہ کی طرح رونے کی بجائے ثقافتوں کے بارے میں سیکھنا چاہیے۔اس حوالے سے برطانیہ کی یونیورسٹی آف ایکسیٹر سے اسلامیات کے پروفیسر ڈاکٹر مصطفیٰ بیگ نے میڈیا کو بتایا کہ بِشت کو بہت ہی کم لوگ پہن سکتے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ قطر میں لیونل میسی کو یہ لباس اعزازی طور پر پہنایا گیا ہے اور یہ قطر کا صرف ایک روایتی انداز ہے، یہ خاص مواقع پر پہنا جانے والا قطر کا قومی لباس بھی ہے،ڈاکٹر مصطفی بیگ نے مزید کہا کہ فیفا ورلڈ کپ بہت بڑا ایونٹ ہے، لہٰذا انہوں نے اعزازی طور پر میسی کو یہ لباس پہنایا۔انہوں نے یہ بھی بتایا کہ بِشت خلیجی ممالک سے منسلک ایک لباس ہے لیکن یہ تمام عرب ممالک میں عام نہیں ہے۔

About the author

Taasir Newspaper