Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

دینیات

بیوی سے محبت کرنا جورو کی غلامی نہیں بلکہ سنتِ رسولﷺ ہے

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 29th Dec.

محمد خورشد عالم

آج کل تو عورت کو صرف موت کے گھاٹ اترتا ہوا ہی دیکھاد جارہا ہے افسوس ،
اپنی بیویوں کو خودکشی کرنے پر مجبور نہ کریں
اپنی بیویوں کو پاوں کی جوتی نہ سمجھیں
اپنی بیویوں سے محبت کریں سنت کو فولو کریں زندگی آسان ہے لوگوں کی سنیں گے تو نہ گھر کے رہیں گے اور نہ گھاٹ کے پھر آخرت بھی بھیانک ہوگی۔
گھر والوں کے کہنے میں آکر اپنی زوجہ پہ ظلم نہ کیا کریں وہ آپکےلئے اپنا سب چھوڑ کہ آتی ہے،
وہ آپ کے لیے ہر تکلیف سہتی ہے،
کیا بدلے میں آپ اسے سچّی محبت نہیں دے سکتے۔۔؟؟
آپ کے نصیب میں جو عورت آگئی بس اسی سے محبت کریں وہ آپ کی جنت تک کی ساتھی ہوگی
اللہ کے نبیﷺ اور حضرت عاٸشہ رضی اللہ کی زندگی کی چند اہم باتیں دیکھ لیجیے شاید آپ کو کچھ سمجھ آجائے،
امام مسلم روایت کرتے ہیں کہ نبی کریم ام المومنین حضرت عائشہ رضی اللہ سے ارشاد فرماتے ہیں:
’’عائشہؓ ! تمہاری خوشی و مسرت اور غم و غصہ اور ناراضگی کا مجھے علم ہوجاتا ہے،مجھے اندازہ ہوجاتا ہے کہ تم مجھ سے خوش ہو یا ناراض ۔‘‘
حضرت عائشہ رضی اللہ نے فرمایا: اے اللہ کے نبی وہ کس طرح ؟
آپ نے فرمایا :
’’ جب تم مجھ سے خوش ہوتی ہو تو قسم کھاتے وقت”ربِ محمد ()”کہتی ہو اور جب ناراض ہوتی ہو تو “ربِ ابراہیم” کہتی ہو۔‘‘ ( مسلم)۔
* ایک مرتبہ نبی رحمت نے حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللّٰہ سے فرمایا:
’’ جس طرح ابی زرع ، ام زرع سے پیار و محبت کرتے ہیں ا سی طرح میں بھی تم سے محبت کرتا ہوں۔‘‘
حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللّٰہ نے فرمایا : اے اللہ کے نبی !میرے ماں باپ آپ پر قربان۔ آپ میری نگاہ میں ام زرع کیلئے ابوزرع سے زیادہ محبوب و عزیز ہیں۔
اس حدیث کو امام بخاری نے روایت کیا ہے جس سے معلوم ہوتا ہے کہ شوہر کو بیوی کے سامنے محبت اور وفاداری کا اظہار کرنا چاہئے اور اسے پیار بھرے لہجے سے پکارنا چاہئے ۔
* آپ حضرت عائشہ صدیقہؓ کو’’ عائشہ رضی اللّٰہ ‘‘کی بجائے پیار سے’’ عائش‘‘ کہہ کر بلاتے اور فرماتے:
’’ اے عائش رضی اللّٰہ! حضرت جبرئیل امین تمہیں سلام کہہ رہے ہیں۔‘‘
بسا اوقات آپ انہیں حمیراء کہہ کر متوجہ فرماتے تھے ( متفق علیہ)۔
حمیراء ، حمراء کا مخفف ہے ۔مراد گوری رنگت ہے۔
* رسو ل اللہ اپنی ازواج کیساتھ کھانا تناول فرماتے تھے ۔ حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللّٰہ فرماتی ہیں کہ میں اور آپ ا یک ساتھ کھانا تناول فرماتے، جس پیالے میں مَیں پانی نوش کرتی اسی پیالہ میں پانی آپ کو پیش کردیتی ، آپ پیارسے اسی جگہ سے پانی نوش فرماتے جس جگہ میرے ہونٹ لگے ہوتے۔ اسی طرح ہڈیوں کو اسی جگہ سے چوستے جس جگہ سے میرا منہ لگا ہوتاتھا ( مسلم )
* حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللّٰہ فرماتی ہیں کہ جب آپ دولت کدہ پر تشریف فرما ہوتے تو میں آپ کے سر میں کنگھی کرتی تھی حالانکہ میں مخصوص ایام سے گزررہی ہوتی تھی لیکن آپ میرے مخصوص ایام کی وجہ سے کراہت محسوس نہیں فرماتے تھے ۔
اسی طرح وہ فرماتی ہیں کہ مخصوص ایام میں بھی آپ میری گود میں اپنا سر مبارک رکھ کر آرام فرماتے تھے ( مسلم)۔
* کبھی کبھار (چاندنی راتوں )میں رسول اکرم حضرت عائشہ صدیقہؓ کے ساتھ چہل قدمی کرنے تشریف لے جاتے تھے۔ راتوں کو آپ اپنی زوجہ محترمہ کے ساتھ خوش گپیاں فرماتے تھے(بخاری)۔
*محسن انسانیت دولت کدے پر ازواج مطہرات کے کاموں میں ہاتھ بٹاتے اور ان کے بوجھ کو ہلکا کرنے کی کوشش کرتے تھے۔ ایک صحابی رضی اللّٰہ نے ام المومنین حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللّٰہ سے دریافت فرمایا کہ آپ جب گھر پر تشریف فرما ہوتے تو ان کی کیا مصروفیت ہوتی تھیں؟تو انہوں نے فرمایاکہ آپ اپنی ازواج مطہرات کے کاموں میں شریک ہوتے تھے ( بخاری) ۔
*ایک دوسری روایت میں آتا ہے کہ حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللّٰہ نے فرمایا کہ رسول اللہ جب گھر تشریف فرما ہوتے تو اپنا کام خود انجام دیتے ، اپنا کپڑے سیتے ، بکریاں دوہتے اوراسی طرح دوسرے کام بھی انجام دیتے تھے (مسند احمد)۔
یہ سب ہمیں سکھانے اور بتانے کے لیے تھا۔۔۔۔ مگر افسوس، ہم ابھی تک پیچھے ہیں اور بیوی سے محبت کو غلامی سمجھتے ہیں ۔
اللہ ہر کسی کا نصیب اچھا کریں اور ہمیں ہمارے پیارے نبیﷺ کی سنت پہ چلنے والا بنائے

About the author

Taasir Newspaper