Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

ملک بھر سے

بی جے پی نے گجرات اسمبلی میں تاریخ ساز فتح حاصل کی

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 8 th Dec.

احمدآباد،8دسمبر:بھارتیہ جنتا پارٹی نے گجرات اسمبلی الیکشن میں تاریخ ساز کامیابی حاصل کی ۔ جب اس پارٹی نے 180ممبروں پر مشتمل اسمبلی میں تین چوتھائی سے زیادہ سیٹوں پر فتح حاصل کی۔ وزیراعظم مودی کی قیادت میں پارٹی نے کانگریس اور عام آدمی پارٹی کا تقریباً صفایا کیا۔ اور اس کے بڑے بڑے رہنماء انتخابی دنگل میں چاروں شانے چت ہوگئے۔بی جے پی نے یہ ثابت کردیا کہ ان کی مقبولیت میں کوئی فرق نہیںآیا ہے کیونکہ2017سے ان کا ووٹ 49فیصدی سے بڑھ کر 53فیصد پہنچ تک گیا۔ کانگریس صرف 19سیٹوں پر ہی کامیابی حاصل کرسکی۔ اور اس کے ووٹ بینک میں 15فیصد کا فرق آیا ہے۔عام آدمی پارٹی جو گجرات میں اپنی کامیابی کے لئے دعویٰ کررہے تھے ان کو صرف پانچ سیٹیں حاصل کی۔ اس سے کانگریس کو زبردست نقصان پہنچا۔کیونکہ اس کاووٹ شیئر12فیصدی پہنچ گیا۔ حالانکہ ابھی ووٹوں کی گنتی جاری ہے لیکن رجحانات سے یہ طے ہوگیا ہے کہ پارٹی کو اتنی اکثریت مل گئی ہے جو ماضی میں کسی پارٹی کو نہیں ملی۔ وزیراعظم نریندر مودی اور وزیر داخلہ امیت شاہ نے گجرات کے عوام کو بی جے پی کو اتنی بڑی کامیابی دینے پر مبارکبادی پیش کی۔ان انتخابات سے یہ ثابت ہوگیا ہے کہ لوگ بی جے پی کی پالیسیوں کی حمایت کررہے ہیں۔وزیراعلیٰ بھوپیندر پاٹل اور پارٹی کے دوسرے رہنماء الکیش ٹھاکر نے اپنے اپنے حلقوں سے جیت رقم کرلی ہے۔عام آدمی پارٹی کے وزارت اعلیٰ کے امیدوار یشو دھن دھاروی الیکشن ہار گئے ہیں۔ بھارتیہ جنتا پارٹی سے موربی اسمبلی سیٹ بھی جیت لی۔ جہاں حال ہی میں پل حادثہ پیش آیا جس میں 150سے زائد لوگ مرگئے۔ کانگریس نے انتخابی مہم میںکوئی دلچسپی نہیں دکھائی۔راہل گاندھی صرف ایک بارراجکوٹ میں ریلی کرنے کے لئے گئے جبکہ نئے منتخب صدر آخری دنوںمیں الیکشن مہم میں دیکھے گئے لیکن وہ زیادہ تنازعات میں ہی گھرے رہے۔ بی جے پی نے یہ ساتواںانتخابات جیت کرایک نیا ریکارڈ قائم کیا۔ اور کسی بھی سیاسی پارٹی کو ابھی تک نصیب نہیں ہوا۔

About the author

Taasir Newspaper