Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

ملک بھر سے

جسٹس کے جی بالاکرشنن کمیشن کے خلاف سپریم کورٹ میں عرضی داخل

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 27rd Dec.

نئی دہلی، 26 دسمبر ( ہ س)۔ تبدیلی مذہب کے ذریعہ اسلام اور عیسائیت قبول کرنے والے دلتوں کو بھی درج فہرست ذات کا درجہ دے کر ریزرویشن کے فوائد دینے کے امکانات اور اس کی حیثیت کی جانچ کرنے کے لئے مرکز کی طرف سے تشکیل دیئے گئے جسٹس کے جی بالا کرشنن کمیشن کے خلاف سپریم کورٹ میں عرضی داخل کی گئی ہے۔ درخواست پرتاپ بابو راو پنڈت نے دائر کی ہے۔ عرضی میں مرکزی حکومت کی طرف سے تشکیل کردہ کمیشن کو منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ دلتوں کو عیسائیت اور اسلام مذہب قبول کرنے کے بعد درج فہرست ذات کا درجہ دینے والے شیڈیولڈ کاسٹ آرڈر 1950 کو چیلنج کرنے والی درخواستیں سپریم کورٹ میں زیر سماعت ہیں۔ درخواست میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ اس سے متعلق درخواستوں کی سماعت جلد از جلد مکمل کی جائے۔عرضی میں کہا گیا ہے کہ مرکزی عرضی پہلے ہی سپریم کورٹ میں زیر التوا ہے اور اگر جسٹس کے جی بالاکرشنن کمیشن کو جانچ کرنے کی اجازت دی گئی تو درخواست پر سماعت میں مزید تاخیر ہو سکتی ہے۔ اس طرح کی تاخیر ایس سی نسل کے عیسائیوں اور مسلمانوں کے حقوق کی خلاف ورزی کا باعث بنے گی، جنہیں گزشتہ 72 سالوں سے ایس سی کے اس استحقاق سے محروم رکھا گیا ہے۔ درخواست میں دلیل دی گئی ہے کہ مذہبی اور لسانی اقلیتوں کے لئے جسٹس رنگناتھ مشرا کمیشن کی 2007 کی رپورٹ نے اسلام اور عیسائی مذہب اختیار کرنے والے دلتوں کو درج فہرست ذات کا درجہ دینے کی حمایت کی تھی۔مرکزی حکومت نے 7 دسمبر کو سپریم کورٹ کو بتایا تھا کہ وہ اس معاملے میں جسٹس رنگناتھ مشرا کمیشن کی رپورٹ کی سفارشات کو نافذ نہیں کر رہی ہے۔ مرکزی حکومت کی جانب سے اٹارنی جنرل آر وینکٹ رمنی نے کہا تھا کہ اس معاملے کی جانچ کے لیے جسٹس بالاکرشنن کی سربراہی میں ایک کمیٹی تشکیل دی گئی ہے۔

About the author

Taasir Newspaper