Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

کھیل

دوسرے میچ میںغلطیاں دہرائیں، تو سیریز ہاتھ سے نکل جائے گی

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 7 th Dec.

نئی دہلی،6دسمبر:ٹیم انڈیا اور بنگلہ دیش کے درمیان 3 ون ڈے میچوں کی سیریز کا دوسرا میچ میرپور کے شیر بنگلہ سٹیڈیم میں کھیلا جائے گا۔ پہلے ون ڈے میں جیت کی دہلیز پر پہنچنے کے بعد ٹیم انڈیا کے ہاتھوں میں میچ نکل گیا۔ بنگلہ دیش نے 136 رنز کے اسکور پر 9 وکٹیں گنوانے کے باوجود ہندوستانی گیند باز بنگلہ دیش کے تابوت میں آخری کیل نہ ٹھونس سکے۔ مستفیض الرحمان اور مہدی حسن معراج نے آخری وکٹ کے لیے 41 گیندوں پر 51 رنز کی ناقابل شکست شراکت داری کرکے انڈیا کے منھ سے فتح چھین لی۔ اس میچ میں بنگلہ دیش کی جانب سے یہ سب سے بڑی شراکت تھی۔ اس میچ میں انڈیا نے کئی غلطیاں کیں، جس کا خمیازہ اسے شکست کی صورت میں اٹھانا پڑا، لیکن، تقریباً 3 غلطیاں ٹیم انڈیا کو سب سے زیادہ مہنگی پڑیں۔بنگلہ دیش کے خلاف پہلے ون ڈے میں کے ایل راہل نے ہندوستان کی جانب سے 70 گیندوں میں 73 رنز کی اننگز کھیلی۔ وہ ٹاپ اسکورر تھے۔ میچ کے بعد انہوں نے اپنی اننگز کے بارے میں ایک بات کہی تھی۔ انہوں نے کہا تھا کہ میچ سے پہلے ہی ہمیں اندازہ تھا کہ میرپور کی وکٹ بیٹنگ کے لیے مشکل ہوگی۔ اس پر گیند رک رک کر آئے گی ۔ کیونکہ پریکٹس وکٹ کا موڈ بالکل ویسا ہی تھا ،جو وکٹ میچ کے لیے استعمال کیا جاتا تھا۔ اب جب راہل کو اس بات کا اندازہ ہو گیا تو باقی بلے بازوں کو بھی یہ بات معلوم ہو گی۔ لیکن بیٹنگ کے دوران کسی نے اس کا خیال نہیں رکھا اور اچھی گیند کے بجائے ہندوستانی بلے باز خراب شاٹ کھیل کر آؤٹ ہوئے۔شیکھر دھون رنز بنانے کے لیے جدوجہد کرتے نظر آئے ۔ ان کا کھاتہ 7ویں گیند پر کھلا۔ دھون نے مہدی حسن معراج کی گیند پر ریورس سوئپ لگانے کی کوشش کی، گیند ان کے ہاتھ سے لگی اور وکٹ پر چلی گئی۔ شریس ایئر نے بھی یہی غلطی کی۔ شارٹ گیند ان کی کمزوری ہے اور وہ پل شاٹ مارنے کے عمل میں اپنی وکٹ بھی گنوا بیٹھے۔کے ایل راہل کو بھی اسی راستے پر چلتے ہوئے دیکھا گیا اور غلط وقت پر پل شاٹ کھیلنے کے بعد پویلین لوٹ گئے۔ راہل جب آؤٹ ہوئے تو 10 اوور باقی تھے۔ اگر وہ آخری اوور تک ڈٹے رہتے تو ہندوستان 200 رنز سے تجاوز کر سکتاتھا اور میچ کا نتیجہ مختلف ہوتا۔ دوسرے ون ڈے میں بھی وکٹ کا موڈ وہی رہے گا۔ ڈبل باؤنس کے ساتھ پچ اسپن باؤلرز کی مدد کرے گی۔ ایسے میں پہلے ون ڈے میں شاٹ سلیکشن کی غلطی، ٹیم انڈیا کو دوسرے میچ میں اسے دہرانے سے بچنا ہوگا۔انڈیا نے پہلے ون ڈے میں خراب فیلڈنگ کی اور یہ بھی بیٹنگ کے ساتھ شکست کی ایک بڑی وجہ تھی۔ ایک اہم موقع پر دیپک چہر کا نو بال بھی انڈیا کو مہنگا پڑا۔ انڈیانے 43ویں اوور کی لگاتار دو گیندوں پر مہدی حسن معراج کو کیچ کرنے کا موقع بھی گنوایا۔ ایک بار وکٹ کیپر کے ایل راہل نے غلطی کی۔ شاردول کی گیند پر معراج نے زوردار شاٹ مارا گیند ہوا میں بہت اونچی گئی۔ کے ایل راہل بھی گیند کے نیچے آ گئے ، لیکن بدقسمتی سے وہ کیچ پکڑ نہ سکے ، جس کی وجہ سے میچ میں انڈیاکو شکست کا سامنا کرنا پڑا ۔

About the author

Taasir Newspaper