Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

ریاست

دہلی، گروگرام کے جنگلوں سے شردھا کی ہڈیاں ملیں

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 15 th Dec.

نئی دہلی،15دسمبر: سنسنی خیز شردھا والکر قتل کیس میں اہم شواہد کی تصدیق ہوگئی ہے۔ ڈی این اے ٹیسٹ سے تصدیق ہوئی کہ دہلی اور گروگرام کے جنگلات سے ملنے والی ہڈیاں شردھا کی ہیں۔ ذرائع کے حوالے سے یہ دعویٰ کیا گیاہے۔ پولیس نے ان ہڈیوں کے ڈی این اے کے نمونے شردھا کے والد کی ہڈیوں سے میچ کر لیے۔ دہلی پولیس نے یہ ہڈیاں مہرولی اور گروگرام کے جنگلوں سے برآمد کی تھیں۔ سینٹرل فارنسک سائنس لیبارٹری (سی ایف ایس ایل) کی رپورٹ آ گئی ہے۔ یہ رپورٹ پولیس کے لیے کیس ثابت کرنے میں اہم موڑ ثابت ہو گی۔ شردھا کے قتل کا الزام اس کے ساتھی آفتاب امین پونا والا پر ہے۔ آفتاب پر شردھا کو قتل کرنے اور اس کی لاش کے کئی ٹکڑے کرنے اور مختلف علاقوں میں پھینکنے کا الزام ہے۔ ملزم شردھا کے ساتھ کرائے کے مکان میں رہتا تھا۔ اس نے مبینہ طور پر شردھا کی لاش کو ٹکڑے ٹکڑے کر دیا اور اسے قتل کرنے کے بعد 300 لیٹر کے ریفریجریٹر میں رکھ دیا۔ پونا والا کا پولی گراف اور نارکو ٹیسٹ ہو چکا ہے۔شردھا قتل کیس کے ملزم آفتاب امین پونا والا کے پولی گراف اور نارکو ٹیسٹ میں سے پولی گراف ٹیسٹ کی رپورٹ تیار کر لی گئی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ رپورٹ جنوبی دہلی کے مہرولی پولیس اسٹیشن کو سونپی گئی ہے۔ تاہم پولیس افسر کی جانب سے اس کی تصدیق نہیں کی گئی۔ لیکن ذرائع کا کہنا ہے کہ پولی گراف ٹیسٹ کی رپورٹ روہنی ایف ایس ایل نے تیار کی ہے جسے پولیس کے حوالے کر دیا گیا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ پولی گراف رپورٹ میں پولیس کو کئی نئی چیزیں ملی ہیں۔ تاہم آفتاب نے اس ٹیسٹ میں بھی زیادہ تر وہی باتیں دہرائی تھیں جو اس نے پہلے پولیس پوچھ گچھ میں کہی تھیں۔ لیکن یہ تمام رپورٹس پولیس کے لیے ضروری ہیں تاکہ وہ انہیں بطور ثبوت عدالت میں پیش کرسکے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ پولیس کے سامنے ملزمان کے بیانات کی کوئی اہمیت نہیں ہے۔ لیکن، یہ رپورٹس پولیس کو آفتاب کے جرم کو عدالت میں ثابت کرنے میں مدد کریں گی۔ بتایا جاتا ہے کہ نارکو ٹیسٹ کی رپورٹ بھی ایک دو دن میں تیار ہو جائے گی۔

About the author

Taasir Newspaper