Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

ریاست

رینو حسین کی شاعری اور فکشن واقعی دلو ں کو متاثر کرتی ہے: عارف نقوی

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 8 th Dec.

میرٹھ8؍دسمبر2022ء: ’’رینو حسین کی کہانیوں میںسماج کے مسائل، انسانی جذبات و خیالات اور عہد حاضر کے پیچیدہ مسائل کو آ سانی سے دیکھا جاسکتا ہے۔ساتھ ہی آپ کی شاعری بھی متاثر کرتی ہے اور ایسا محسوس ہو تا ہے جیسے کانچ کا گلاس ہو اور اس میں رنگ ڈال دیے گئے ہوں۔گھر میں کام کرنے والی عورتوں اور سماج میں گرے پڑے لوگوں کے درد کو سمجھنے اور دیکھنے کا معاملہ ہو تو رینو جی کی کہانیاں اور ان کی شاعری کا مطا لعہ ضروری ہوجاتا ہے ان کی کہانیوں اور شاعری میں سماج کی سفاک حقیقتوں کو دیکھا جاسکتا ہے۔یہ الفاظ تھے مہمان خصوصی معروف شاعرہ دیپالی جین ضیاءؔ کے جو خصوصی مقرر کی حیثیت سے شعبۂ اردو، چودھری چرن سنگھ یونیورسٹی اور بین الاقوامی نوجو ان اردو اسکالرز انجمن (آیوسا) کے زیر اہتمام منعقد ’’رینو حسین سے ایک ملاقات‘‘موضوع پر اپنی تقریر کے دوران ادا کررہی تھیں۔
اس سے قبل پرو گرام کا آغاز فاروق شیروانی نے تلاوت کلام پاک سے کیا۔ہدیۂ نعت عظمیٰ پروین نے پیش کیا پروگرام کے صدارت کے فرائض آیوساکی صدر ڈاکٹر ریشما پروین،لکھنؤنے انجام دیے اور پروگرام کی سرپرستی صدر شعبۂ اردو پروفیسر اسلم جمشید پوری نے فرمائی۔مہمان خصوصی کے بطور طنز و مزاح کی معروف شاعرہ دیپا جین ضیاءؔ، غازی آباد نے آن لائن شر کت کی۔ استقبال ڈاکٹر ارشاد سیانوی، نظامت ڈاکٹر الکا وششٹھ اور شکریے کی رسم ڈاکٹر شاداب علیم نے انجام دی۔
استقبالیہ کلمات ادا کرتے ہوئے ڈا کٹر ارشاد سیانوی نے کہا کہ رینو حسین پیشے سے انگریزی کی استاد ہیں، ساتھ ہی ساتھ آپ ایک اچھی شاعرہ بھی ہیں اور آپ کی شاعری مقبو لیت کے نئے آسمان سر کررہی ہے۔ آپ کی ہندی شاعری نے سامعین اور قارئین کے دلوں کو چھو لیا ہے۔ آپ کے دو شعری مجمو عے’’ پانی پیا‘‘ اور’’ جیسے‘‘ منظر عام پر آ چکے ہیں۔ اس کے علاوہ ایک افسانوی مجموعہ’’گنٹی‘‘ سے بھی مقبول ہو چکا ہے۔ آپ کا شعر و شاعری کا سفر جاری ہے، آپ تعلیم و تربیت کے لیے بھی سماج میں مقبو لیت حاصل کررہی ہیںاور جلد ہی آپ کا ایک اور مجموعہ’’گھر کی عورتیں اور چاند‘‘ کے نام سے منظر عام پر آ نے والا ہے۔
پرو فیسر اسلم جمشید پوری نے کہا کہ رینو حسین کی کہانیاں ہمیں پریم چند کی یاد دلا تی ہیں۔ سماج میں جو ظلم و ستم ہو رہے ہیں ان کو رینو حسین کے کردار ہمیں بہت دن تک یاد رہیں گے۔ ظلم کے خلاف اٹھنے والے احتجاج کو رینو حسین نے خوبصورتی سے پیش کیا ہے۔ رینو حسین کی غزلیں اور کہانیاں سماج کو نئی راہ دکھانے کا کام کرتی ہیں۔
عارف نقوی نے کہا کہ شعبۂ اردو چو دھری چرن سنگھ یو نیورسٹی کے بین الاقوامی سیمینار کے تاثر سے میں ابھی تک با ہر نہیں آ پا رہا ہوں۔ ادب نما کے پرو گرام میں شریک نہ ہو نے کا مجھے کافی افسوس اس لیے بھی ہے کہ ان پروگراموں سے مجھے بہت کچھ سیکھنے کا موقع ملتا ہے۔ یہ لگن،محنت اردو سے محبت کا جذبہ شعبۂ اردو پر ہندو ستان فخر کرے گا۔مجھے پو را یقین ہے کہ جس خلوص کے ساتھ شعبۂ اردو کے سبھی لوگ کام کررہے ہیں۔ یہ شعبہ پوری دنیا میں مقبولیت حاصل کرے گا۔مجھے بڑی خوشی ہوئی رینوحسین کو سن کر آپ کی شاعری اور فکشن واقعی دلو ں کو متاثر کرتی ہے۔میری دعا ہے کامیابی کے ساتھ آپ کا سفر جاری رہے۔
ڈاکٹر ریشما پروین نے اپنی صدارتی تقریر میں کہاکہ جس طرح سے رینو حسین نے کہانی کو پیش کیا وہ حقیقت میں سماج میں پھیلتے مسائل کی کہانی ہے۔ اس کہانی کے کردار ساتھ ساتھ چلتے ہوئے نظر آ تے ہیں۔ میں اس کامیاب پروگرام کے لیے دو نوں مہمانان اور شعبۂ اردو کو بہت بہت مبارک باد!
پرو گرام سے ڈاکٹر ولا جمال العسیلی، مصر،ڈاکٹر نگار عظیم،دہلی ڈاکٹر شاداب علیم،ڈاکٹر آصف علی، محمد شمشاد، سعید احمد سہارنپوری اور طلبہ و طالبات آن لائن جڑے رہے۔

About the author

Taasir Newspaper