Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

دنیا بھر سے

سعودی عرب میں مقامی سطح پر کار سازی کے کتنے مواقع موجود ہیں؟

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 13 th Dec.

ریاض،13دسمبر: سعودی عرب کے نائب وزیر صنعت و معدنی وسائل اسامہ بن عبدالعزیز الزامل نے ’العربیہ‘ کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا ہے کہ لوسیڈ الیکٹرک کار فیکٹریاں اور “سیر” کار فیکٹری اس صنعت سے وابستہ ویلیو چینز میں سرمایہ کاری کے مواقع پیدا کرکے سعودی عرب میں مینوفیکچرنگ کے شعبے میں کوانٹم لیپ حاصل کرنے میں اہم کردار ادا کرتی ہے۔الزمل نے مزید کہا کہ مملکت میں کار فیکٹریاں کئی صنعتوں کا کلسٹر بنانے میں اپنا حصہ ڈالیں گی جنہیں مقامی سطح سے خام مال فراہم کیا جائے گا۔انہوں نے وضاحت کی کہ “لوسیڈ” فیکٹری اپنی پیداوار کا تقریباً 70 فی صد برآمدات کے لیے مختص کرتی ہے، جو گاڑیوں کی صنعت میں داخل ہونے والی سعودی مصنوعات کی برآمد میں حصہ ڈالتی ہے، جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ ہم سعودی ایکسپورٹ اتھارٹی کے ذریعے کچھ ممالک کے ساتھ بیرونی طور پر کام کر رہے ہیں تاکہ آٹوموٹو سیکٹر سے متعلق ان مصنوعات کو برآمد کرنے کے لیے مواقع پیدا کیے جا سکیں۔سعودی نائب وزیر برائے صنعت و معدنی وسائل نے کہا کہ مملکت کی قومی صنعت کی حکمت عملی کا مقصد 12 شعبوں کو ترقی دینا ہے جن میں فوج، خوراک، دواسازی، طبی، ہوا بازی اور سمندری نقل و حمل شامل ہیں اور ہم نے ان ٹارگٹڈ شعبوں میں سے 118 اشیاء کی نشاندہی کی ہے۔حکمت عملی میں چوتھے صنعتی انقلاب کو اپنانے کے حوالے سے الزامل نے کہا کہ اس میں کئی ٹولز یعنی مصنوعی ذہانت، انٹرنیٹ آف تھنگز اور بلاک چین شامل ہیں جنہیں جدید مینوفیکچرنگ کے لیے ایک انجن سمجھا جاتا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ سعودی وزارت صنعت نے فیکٹریوں میں آپریشنل عمدگی کی سطح کو بلند کرنے کے پروگراموں پر کام کیا ہے، جس میں صنعتی شہروں میں انفراسٹرکچر کو سپورٹ اور مضبوط کرنا شامل ہے تاکہ فیکٹریوں کی مدد کے لیے ان کی تکنیکی تیاری کو بڑھایا جا سکے۔انہوں نے نشاندہی کی کہ فیوچر فیکٹریز پروگرام کا مقصد مملکت میں 2025 تک 4000 فیکٹریوں کو انتہائی خودکار فیکٹریوں میں تبدیل کرنا ہے۔انہوں نے انکشاف کیا کہ ان فیکٹریوں میں پیٹرو کیمیکل انڈسٹری، ملٹری انڈسٹریز، فوڈ سکیورٹی اور ادویات سے متعلق صنعتیں شامل ہیں۔ وزارت صنعت مملکت میں ویکسین کی صنعت کو مقامی بنانے کے لیے کام کر رہی ہے۔

About the author

Taasir Newspaper