Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

کھیل

فیفا ورلڈ کپ: ہیری کین پنالٹی کو گول میں بدلنے سے محروم، انگلینڈ باہر، فرانس ساتویں بار سیمی فائنل میں

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 11 th Dec.

دوحہ 11دسمبر: فرانسیسی ٹیم ساتویں مرتبہ فیفا ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں پہنچ گئی ہے۔ 1982 اور 1986 کے بعد پہلی بار فرانسیسی ٹیم مسلسل دو ایڈیشنز کے سیمی فائنل میں پہنچی ہے۔
فرانس نے سنسنی خیز مقابلے میں انگلینڈ کو 2-1 سے شکست دی۔ اس فتح کے ساتھ ہی فرانسیسی ٹیم مسلسل دوسری مرتبہ سیمی فائنل میں پہنچنے میں کامیاب ہو گئی۔ اب سیمی فائنل میں ان کا مقابلہ مراکش سے ہوگا۔ مراکش نے کوارٹر فائنل میں پرتگال کو 1-0 سے شکست دی۔ ساتھ ہی دوسرے سیمی فائنل میں ارجنٹائن کی ٹیم کا مقابلہ کروشیا سے ہوگا۔
فرانس اب تاریخ بنانے سے صرف دو قدم دور ہے۔ اگر فرانس کی ٹیم ٹائٹل کا دفاع کرنے میں کامیاب ہو جاتی ہے تو گزشتہ 60 سالوں میں وہ مسلسل دو ورلڈ کپ جیتنے والی پہلی ٹیم بن جائے گی۔ پچھلی بار ایسا برازیل نے کیا تھا۔ انہوں نے 1958 اور 1962 میں لگاتار دو ورلڈ کپ جیتے تھے۔ اس کے بعد کوئی بھی ٹیم لگاتار دو ورلڈ کپ جیتنے میں کامیاب نہیں ہو سکی۔
فرانسیسی ٹیم ساتویں مرتبہ فیفا ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں پہنچی ہے۔ 1982 اور 1986 کے بعد پہلی بار فرانسیسی ٹیم مسلسل دو ایڈیشنز کے سیمی فائنل میں پہنچی ہے۔ انگلینڈ کی ٹیم ساتویں بار ورلڈ کپ کے کوارٹر فائنل راؤنڈ سے باہر ہو گئی ہے۔
فرانسیسی منیجر ڈیڈیئر ڈیشاؤ اس ٹیم کے ساتھ ورلڈ کپ کے 17 میچوں کی کوچنگ کر چکے ہیں جن میں سے ٹیم نے 13 میچ جیتے ہیں۔ دو میچ ڈرا ہوئے ہیں اور فرانس دو ہاری ہے۔ صرف برازیل کے سابق کوچ فیلیپ سکولاری (14) اور ہیلمٹ شون (16) نے ڈیشاو سے زیادہ ٹورنامنٹ جیتے ہیں۔
دونوں ٹیموں نے میچ کا آغاز جارحانہ انداز میں کیا تاہم 17 ویں منٹ میں فرانس کے اوریلین چومینی نے باکس کے باہر سے گول کر کے اپنی ٹیم کو 1-0 کی برتری دلا دی۔ ہاف ٹائم تک یہی اسکور رہا۔ انگلینڈ کی ٹیم پہلے ہاف میں پیچھے رہنے کے بعد ورلڈ کپ میں کبھی کوئی میچ نہیں جیت سکی۔ اس صورتحال میں انگلش ٹیم نے دو میچ ڈرا کیے ہیں اور اسے سات میچوں میں شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ اس کے ساتھ ہی فرانس کی ٹیم ہاف ٹائم میں برتری حاصل کرنے کے بعد ورلڈ کپ میں کبھی نہیں ہاری ہے۔ اس میچ سمیت فرانس کی ٹیم نے گزشتہ 26 میں سے 25 میں فتح حاصل کی ہے۔ ایک میچ برابری پر ختم ہواتھا۔
اس کے بعد دوسرے ہاف کے 54ویں منٹ میں فرانس کی جانب سے گول کرنے والے چومینی نے انگلینڈ کے بوکایو ساکا کو باکس کے اندر ہی فاول کردیا۔ اس پر ریفری نے پنالٹی شوٹ کی پیشکش کی۔ اس پر ہیری کین نے گول کر کے انگلینڈ کو واپسی دلائی۔ ہیری کین انگلینڈ کے لیے مشترکہ طور پر سب سے زیادہ گول کرنے والے کھلاڑی بھی بن گئے۔ انہوں نے وین رونی کا ریکارڈ برابر کر دیا۔ انگلینڈ کے لیے ہیری کین کا یہ 53 واں گول تھا۔ رونی نے 120 میچوں میں اتنے گول کیے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی یہ کین کا 80 واں میچ تھا۔
78ویں منٹ میں فرانس کے اولیور گیروڈ نے ایک بار پھر اپنی ٹیم کو 2-1 کی برتری دلا دی جب انہوں نے گریزمین کے شاندار پاس سے ہیڈر پر گول کر دیا۔جیروڈ 36 سال سے زیادہ عمر کے دوسرے کھلاڑی ہیں جنہوں نے ورلڈ کپ کے ایک ایڈیشن میں کم از کم چار گول کیے ہیں۔ اس سے قبل راجر ملا نے 1990 میں کیمرون کے لیے یہ کارنامہ انجام دیا تھا۔ تب ان کی عمر 38 سال تھی۔ جیروڈ نے گریزمین کی معاونت پر گول کیا۔ اس سے قبل چومینی نے بھی گریزمین کی معاونت پر گول کیا۔ گریزمین ورلڈ کپ کے ایک میچ میں فرانس کے لیے دو اسسٹ کرنے والے چوتھے کھلاڑی ہیں۔
اس کے بعد فرانس کے ہرنینڈس نے 81ویں منٹ میں انگلینڈ کے میسن ماؤنٹ کو فاول کیا۔ جس کی وجہ سے انگلینڈ کو پنالٹی ملی ۔ ہیری کین دوبارہ پنالٹی اسٹروک لینے آئے لیکن اس بار چوک گئے اور گیند گول پوسٹ کے اوپر چلی گئی۔ اس طرح انگلینڈ برابری سے محروم رہا اور یہیں سے فرانس نے میچ پر قبضہ جمالیا۔ آٹھ منٹ کا انجری ٹائم دیا گیا لیکن انگلش ٹیم واپسی نہ کر سکی۔ ہیری کین میچ کے بعد کافی مایوس نظر آئے۔ اسی دوران کئی انگلش کھلاڑی میدان میں روتے ہوئے بھی نظر آئے۔

About the author

Taasir Newspaper