Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

ریاست

میٹروکاؤنٹر پر اسمارٹ کارڈ نہیں، ٹوکن پر کوئی رعایت نہیں

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 20th Dec.

نئی دہلی،20دسمبر:میٹرو اسٹیشنوں پر نئے ا سمارٹ کارڈ خریدنے میں مسافروں کو اب بھی مشکلات کا سامنا ہے۔ خاص طور پر اگر آپ دوپہر یا شام کو کسی اسٹیشن پر اسمارٹ کارڈ خریدنے جاتے ہیں تو ہو سکتا ہے کہ آپ کو کارڈ نہ ملے اور آپ کو مختلف اسٹیشنوں پر جانا پڑے۔ نئے کارڈ آ رہے ہیں، لیکن اتنے کم کہ چند گھنٹوں میں سب فروخت ہوجاتے ہیں۔ کسٹر کیئر ایجنٹس کا کہنا ہے کہ اگر آپ صبح 9 یا 10 بجے کے بعد کارڈ خریدنے آتے ہیں تو اس بات کا پورا امکان ہے کہ آپ کو خالی ہاتھ لوٹنا پڑے گا۔ جن اسٹیشنوں پر زیادہ بھیڑ نہیں ہے، وہاں کارڈ ملنے کی امید کم ہے۔کارڈ نہ ملنے کی وجہ سے مسافروں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ سب سے پہلے، انہیں TVM یا کسٹمر کیئر کاؤنٹر پر لائن میں کھڑے ہو کر ٹوکن خریدنا پڑتا ہے، جس میں ان کا کافی وقت ضائع ہوجاتا ہے۔ چوٹی کے اوقات میں لمبی لائن لگتی ہے۔ کارڈ کے ساتھ سفر نہ کرنے کی وجہ سے رعایت بھی نہیں ملتی۔ ڈی ایم آر سی صرف ا سمارٹ کارڈ کے ساتھ سفر کرنے والوں کو ہر سواری کرایہ پر 10% رعایت دیتا ہے۔ اگر کسی کو میور وہار سے منڈی ہاؤس جانا ہے تو اسمارٹ کارڈ کا کرایہ صرف 27 روپے ہے، لیکن ٹوکن کے ساتھ سفر کرنے کا کرایہ 30 روپے ہے۔ جن لوگوں کے کارڈ گم، خراب یا ٹوٹ گئے ہیں، انہیں ٹوکن کے ساتھ سفر کرنا ہوگا۔ذرائع نے یہ بھی اعتراف کیا کہ ا سمارٹ کارڈز کی قلت اب بھی برقرار ہے۔ کارڈز کی روزانہ فروخت میں کمی اس کا ثبوت ہے۔ اس سے پہلے میٹرو اسٹیشنوں سے روزانہ اوسطاً 14-15 ہزار نئے سمارٹ کارڈ فروخت ہوتے تھے۔ نومبر میں اسمارٹ کارڈز کی یومیہ اوسط فروخت 12 ہزار 757 تھی لیکن دسمبر میں اوسط فروخت مزید گر گئی اور 15 دسمبر سے پہلے روزانہ صرف 8 ہزار نئے سمارٹ کارڈ فروخت ہو رہے تھے۔ تاہم اب یہ تعداد بڑھ کر 11 ہزار کے قریب ہو گئی ہے۔ ڈی ایم آر سی ذرائع نے امید ظاہر کی ہے کہ اس مہینے کے آخر یا اگلے مہینے سے حالات معمول پر آجائیں گے۔ کچھ نئے دکانداروں کو سپلائی آرڈر بھی دیے گئے ہیں اور ان سے اضافی 30 لاکھ نئے اسمارٹ کارڈ حاصل کیے جا رہے ہیں۔ذرائع کا کہنا ہے کہ درحقیقت میٹرو کے اسمارٹ کارڈ میں استعمال ہونے والی سیمی کنڈکٹر چپ کافی عرصے سے دستیاب نہیں ہے۔ اس چپ کی سپلائی پوری دنیا میں کم ہو گئی ہے۔ اس کی وجہ سے دکاندار مناسب تعداد میں کارڈ فراہم نہیں کر پا رہے ہیں۔ میٹرو میں تقریباً 75 فیصد مسافرا سمارٹ کارڈ کے ذریعے سفر کرتے ہیں۔ ہر روز لوگوں کی ایک بڑی تعداد مختلف وجوہات کی وجہ سے نئے کارڈ خریدتی ہے جیسے گمشدہ، خراب، ٹوٹے ہوئے کارڈ۔ اس کے علاوہ نئے مسافر بھی کارڈ خریدنے آتے ہیں۔ جس کی وجہ سے کارڈ کی ضرورت ہر وقت رہتی ہے۔

About the author

Taasir Newspaper