Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

ملک بھر سے

آئی جی آئی ایئر پورٹ سے نکل کر میٹرواسٹیشن تک پہنچنا ہوا آسان

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 5th Jan.

نئی دہلی ،5جنوری:دہلیہوائی اڈے کے ٹرمینل-1 سے نکلنے والے مسافروں کو میجنٹا لائن کے ڈومیسٹک ایئرپورٹ میٹرو اسٹیشن تک پہنچنے کے لیے اب کسی سے میٹرو اسٹیشن کا پتہ لگانے اور میٹرو اسٹیشن تک اپنے سامان کے ساتھ 250-300 میٹر پیدل چلنے کی ضرورت نہیں ہوگی۔ جیسے ہی مسافر آمد گیٹ سے باہر نکلیں گے، انہیں اپنے سامنے میٹرو اسٹیشن تک پہنچنے کا راستہ نظر آئے گا۔ ڈی ایم آر سی نے یہاں ایک نیا سب وے بنایا ہے، جسے بدھ سے مسافروں کے استعمال کے لیے کھول دیا گیا ہے۔ اب لوگ اس سب وے کے ذریعے براہ راست میٹرو اسٹیشن میں داخل ہو سکیں گے۔ سب وے کا انٹری گیٹ ارائیول گیٹ سے چند قدم کے فاصلے پر بنایا گیا ہے جو مسافروں کو باہر نکلتے ہی نظر آئے گا۔ میٹرو سے T-1 جانے والے مسافروں کو اسٹیشن سے نکل کر روانگی گیٹ تک جانے میں بھی آسانی ہوگی۔ڈی ایم آر سی کے پرنسپل ایگزیکٹو ڈائریکٹر انوج دیال نے کہا کہ یہ 130 میٹر طویل نیا زیر زمین سب وے ہوائی اڈے کے ٹرمینل-1 اور میجنٹا لائن کے آئی جی آئی ڈومیسٹک ایئرپورٹ میٹرو اسٹیشن کے درمیان رابطے کو مزید بہتر بنائے گا۔ نئے سب وے کو بدھ کے روز ڈی ایم آرسی کے منیجنگ ڈائریکٹر وکاس کمار کی موجودگی میں مسافروں کے استعمال کے لیے باقاعدہ طور پر کھول دیا گیا۔ سب وے کے داخلے؍خارج پر سیڑھیوں کے ساتھ دو ایسکلیٹرز اور دو لفٹیں بھی لگائی گئی ہیں۔ چونکہ ایئرپورٹ پر مسافر بہت زیادہ سامان لے کر جاتے ہیں، اس کو مدنظر رکھتے ہوئے یہاں عام لفٹوں سے زیادہ گنجائش والی لفٹیں لگائی گئی ہیں، جو ایک ساتھ 26 افراد کو لے جا سکتی ہیں۔ سب وے میں ایل ای ڈی لائٹنگ کا انتظام کیا گیا ہے اور اسے خوبصورت بنانے کے لیے کئی طرح کے آرٹ ورک بھی لگائے گئے ہیں۔میٹرو حکام نے بتایا کہ اس سے قبل آمد گیٹ سے نکلتے ہوئے مسافروں کو میٹرو اسٹیشن کے گیٹ نمبر 3 تک تقریباً 250-300 میٹر پیدل چل کر وہاں سے اسٹیشن میں داخل ہونا پڑتا تھا۔ اس کے لیے درمیان میں سڑک عبور کرنا پڑی جس کی وجہ سے کافی پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔ اب کسی بھی موسم میں چاہے وہ سردی ہو، گرمی ہو یا بارش، مسافروں کو اپنے سامان کے ساتھ میٹرو اسٹیشن تک پہنچنے کے لیے کھلے آسمان تلے نہیں چلنا پڑے گا۔ارائیول گیٹ سے چند قدم کے فاصلے پر سب وے کا داخلی دروازہ ہے، جہاں سے لوگ سب وے میں داخل ہو کر براہ راست میٹرو سٹیشن تک پہنچ سکیں گے۔ حالانکہ اس سب وے کو بہت پہلے کھول دیا جانا چاہیے تھا، لیکن کووڈ کی وجہ سے میٹرو پراجیکٹس پر پڑنے والے اثرات کی وجہ سے اس سب وے کے کام میں بھی تاخیر ہوئی۔

About the author

Taasir Newspaper