Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

ریاست

آشرم فلائی اوور کی بندش سے رنگ روڈ پرمزید بڑھنے لگا ٹریفک

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 3rd Jan.

نئی دہلی،3 جنوری:دارالحکومت دہلی کے آشرم فلائی اوور کے توسیعی کام کو مکمل کرنے کے لیے اتوار کی رات سے اس فلائی اوور کے دونوں کیرج ویز کو مکمل طور پر ٹریفک کے لیے بند کر دیا گیا ہے۔ رنگ روڈ پر آشرم فلائی اوور کے اوپر سے گزرنے والی تمام گاڑیوں کو اب نیچے مین روڈ سے گزرنا ہوگا۔ تعمیراتی کام کی وجہ سے یہاں کی سڑک پہلے ہی بہت تنگ ہو چکی تھی۔ اب اس پر ٹریفک کا دباؤ بڑھ گیا ہے جس کے بعد پیر سے لوگوں کی مشکلات میں اضافہ ہوگیا ہے۔ آشرم فلائی اوور کی بندش کا اثر رنگ روڈ پر دور دور تک نظر آرہا ہے اور اوقات کار میں شدید جام رہتا ہے۔ اس سے بچنے کے لیے لوگ بارہ پلا ایلیویٹیڈ روڈ، متھرا روڈ، لالہ لاجپت رائے مارگ، کیپٹن گوڑ مارگ، آؤٹر رنگ روڈ، کالندی کنج روڈ جیسے متبادل راستوں کا استعمال کر رہے ہیں، جس کی وجہ سے ان راستوں پر بھیڑ بھاڑ بڑھنے لگی ہے۔ ایمس اور صفدر جنگ اسپتال جانے والوں کو خاص طور پر کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ یہ صورت حال آئندہ ڈیڑھ سے دو ماہ یا اس سے زائد عرصے تک جاری رہ سکتی ہے۔فلائی اوور کی بندش کا سب سے زیادہ اثر ڈی این ڈی اور سرائے کالے خان سے آشرم کی طرف آنے والے راستے پر دیکھا جا رہا ہے۔ اس حصے پر مہارانی باغ اور آشرم کے درمیان سڑک بہت تنگ ہو گئی ہے جس کی وجہ سے گاڑیاں رینگتی نظر آتی ہیں۔ سرائے کالے خان اور ڈی این ڈی کے قریب باراپلا ایلیویٹڈ روڈ کے داخلی اور خارجی راستے بھی رنگ روڈ جام ہونے کی وجہ سے بند ہیں۔ اس سے مزید مسائل پیدا ہو رہے ہیں۔ لوگوں کو ایلیویٹیڈ روڈ تک پہنچنے کے لیے بھی جام میں پھنسنا پڑتا ہے یا اس سے نکل کر مشرقی دہلی یا نوئیڈا کی طرف جانا پڑتا ہے۔ ڈی ٹی سی اور کلسٹر بسوں کا وقت بھی متاثر ہو رہا ہے اور بسیں لیٹ ہو رہی ہیں۔ متھرا روڈ کے دونوں طرف بھیڑ بڑھ گئی ہے۔دہلی کے آشرم فلائی اوور کو اگلے 45 دنوں کے لیے بند کر دیا گیا ہے۔ اس بندش کی وجہ سے آج صبح اس راستے پر شدید ٹریفک جام دیکھا گیا۔ ٹریفک پولیس نے عوام سے متبادل راستے اختیار کرنے کی اپیل کی ہے۔ آج اس روٹ پر ٹریفک کی حالت پر ایک نظر ڈالیں۔کچھ مسافروں نے ٹویٹر پر جام کی تصویریں شیئر کیں، جبکہ زیادہ سے زیادہ اوقات کے دوران راستے پر سفر کرنے والوں نے بتایا کہ انہیں آشرم بلاک کو عبور کرنے میں تقریباً آدھے گھنٹے سے زیادہ کا وقت لگا۔ٹریفک پولیس حکام نے سوشل میڈیا کے ذریعے معلومات شیئر کرتے ہوئے بتایا کہ آشرم کے علاقے اور اس کے آس پاس بہت زیادہ ٹریفک ہے۔ لوگوں نے پولیس کو بھی فون کرکے ٹریفک جام کی اطلاع دی۔فلائی اوور کی بندش کی وجہ سے ٹریفک پولیس نے لوگوں کو اپنی گاڑیاں صرف مقررہ جگہوں پر پارک کرنے کا مشورہ دیا اور مسافروں سے اپیل کی کہ اگر وہ اسپتال، بس اسٹینڈ، ریلوے اسٹیشن اور ایئرپورٹ جارہے ہیں تو وقت لے کر گھر پہنچ جائیں۔ باہر نکلوآشرم چوک، ڈی این ڈی فلائی اوور، متھرا روڈ اور نوئیڈا سے گزرنے والے کیریج وے کے دونوں طرف آؤٹر رنگ روڈ سے آنے والے مسافروں کو کافی پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔ٹریفک پولیس نے ایک ایڈوائزری جاری کرتے ہوئے بتایا تھا کہ یکم جنوری سے آشرم فلائی اوور اور نئے ڈی این ڈی فلائی اوور کے درمیان لنک روڈ کی تعمیر کی وجہ سے آشرم فلائی اوور کے دونوں کیرج ویز بند کر دیے جائیں گے۔ایڈوائزری میں کہا گیا ہے کہ آشرم فلائی اوور، آشرم چوک، ڈی این ڈی فلائی اوور اور متھرا روڈ سے گزرنے والے دونوں اطراف کی کیریج ویز کو جوڑنے والی سڑکوں اور اسٹریچ پر ٹریفک کی نقل و حرکت محدود ہو سکتی ہے اور راستوں کو موڑ دیا جا سکتا ہے۔آشرم فلائی اوور کے بند ہونے سے باراپلا فلائی اوور، کالندی کنج، آئی ٹی او، پرگتی میدان ٹنل، میور وہار، اکشردھام، این ایچ-9، متھرا روڈ اور کچھ دیگر راستوں پر ٹریفک میں اضافہ ہوگا۔ ٹریفک پولیس کا مشورہ ہے کہ وسطی دہلی اور جنوبی دہلی سے آنے والے لوگ جنھیں مشرقی دہلی جانا ہے اس راستے کے بجائے آئی ٹی او یا بھیرن مارگ کا راستہ اختیار کریں۔ بدر پور اور تغلق آباد سے آنے والے لوگوں کے لیے کالندی کنج کا راستہ اختیار کرنا بہتر ہوگا۔موڑ کے پیش نظر پورے علاقے کے مختلف مقامات پر بڑی تعداد میں ٹریفک پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ کئی مارشلز بھی لگائے گئے ہیں۔ مختلف مقامات پر اشارے لگا کر ڈائیورشن کے بارے میں بھی معلومات دی گئی ہیں۔ جامعہ اور نیو فرینڈز کالونی سے آنے والی ٹریفک کو سرائے کالے خان اور ڈی این ڈی کی طرف یو ٹرن لینے کے لیے آشرم فلائی اوور کی ریڈ لائٹ کی طرف موڑ دیا جائے گا، رنگ روڈ اور سی وی رمن مارگ کے ٹی پوائنٹس پر فلائی اوور کا استعمال کرتے ہوئے ایک نئی ٹریفک لائٹ لگائی گئی ہے۔ نیچے نیا یو ٹرن بنا کر یہاں انسٹال کریں، تاکہ لوگ یہاں سے دائیں مڑ کر آگے بڑھ سکیں۔ تاہم اس کے لیے رنگ روڈ پر ڈی این ڈی سائیڈ سے آنے والی ٹریفک کو وقفے وقفے سے روکنا پڑتا ہے جس کی وجہ سے کچھ مشکلات پیش آرہی ہیں۔ٹریفک پولیس کا دعویٰ ہے کہ یہاں نئے یو ٹرن کی تعمیر سے آشرم فلائی اوور کے کراسنگ پر ٹریفک میں 20 فیصد کمی آئی ہے۔ اس کراسنگ کے قریب بنائے گئے بس اسٹاپ کو بھی پیچھے کی طرف منتقل کردیا گیا ہے لیکن معلومات نہ ہونے کی وجہ سے نہ تو وہاں بسیں رک رہی ہیں اور نہ ہی لوگ وہاں بسوں کا انتظار کرتے نظر آرہے ہیں۔

About the author

Taasir Newspaper