Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

ریاست

راجدھانی میں کہرے کا ستم، ٹھنڈ میں زبردست اضافہ

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 2nd Jan.

نئی دہلی،2جنوری:راجدھانی دہلی میں اس وقت سخت سردی پڑ رہی ہے۔ اس شدید سردی سے بچنے کے لیے لوگ جیکٹس، ٹوپی، الاؤ اور نہ جانے کیا کچھ بچا رہے ہیں۔ کم سے کم درجہ حرارت 10 ڈگری سے نیچے بتایا جا رہا ہے۔ لوگوں کے دن کا آغاز گھنی دھند اور سردی کی لہر سے ہو رہا ہے۔ لیکن جو اعداد و شمار ہمارے سامنے آئے ہیں وہ کچھ اور ہی کہانی بیان کر رہے ہیں۔ دہلی میں دسمبر کے سردی کے اعداد و شمار کے بارے میں بات کریں، یہ 4 سالوں میں پہلی بار ہے کہ یہ برفیلی ہواؤں کے بغیر گزرا ہے۔اس کے ساتھ ہی 7 سال میں پہلی بار اس مہینے بارش نہیں ہوئی۔ہندوستانی محکمہ موسمیات نے کہا کہ اس سال دہلی میں سردی کی لہر 2019، 2020 اور 2021 کے مقابلے میں نہ ہونے کے برابر تھی۔ محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ اس سال دسمبر میں ہوا میں نمی بھی بہت کم تھی جس کی وجہ سے 7 سال میں پہلی بار اس ماہ بارشیں دور رہیں۔ دوسری جانب اگر ہم گزشتہ سال کی بات کریں تو سال 2021 میں دسمبر کے مہینے میں 4 دن بارش ہوئی جب کہ 2020 میں ایک دن اور 2018 میں 2 دن بارش ہوئی۔اس سال دسمبر میں زیادہ سے زیادہ اور کم سے کم درجہ حرارت میں بھی فرق آیا ہے۔ دسمبر 2022 کے مہینے میں، دہلی میں زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 23.6 ڈگری سیلسیس ریکارڈ کیا گیا تھا جبکہ کم سے کم درجہ حرارت 7.4 ڈگری سیلسیس ریکارڈ کیا گیا تھا۔ گزشتہ سال کے مقابلے میں سال 2020 میں زیادہ سے زیادہ اور کم سے کم درجہ حرارت 22.4 اور 8.1 ڈگری سیلسیس ریکارڈ کیا گیا، جب کہ سال 2019 میں زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت 18.7 اور 7.6 ڈگری سیلسیس ریکارڈ کیا گیا۔ اور 2018 میں، کم سے کم درجہ حرارت 6.7 ڈگری سیلسیس ریکارڈ کیا گیا تھا۔سردی کی لہر اس وقت تصور کی جاتی ہے جب کم از کم درجہ حرارت 10 ڈگری سے کم ہو اور زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت معمول سے 4.5 ڈگری کم ہو۔ موسمی ماہرین نے بتایا کہ اس بار کم نمی، صاف آسمان اور کمزور مغربی ڈسٹربنس کی وجہ سے دہلی میں رات کے وقت درجہ حرارت میں کمی اور دن کے وقت زیادہ درجہ حرارت محسوس ہوا ہے۔ اس سے قبل 2017 میں سردی کی لہر نہیں آئی تھی جبکہ 2016 میں آخری بار بارش نہیں ہوئی تھی۔

About the author

Taasir Newspaper