Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

ریاست

زمین کیلیے 50 سالہ پربھات یادو کو جرائم پیشہ افراد نے نیند کی حالت میں گولی مار موت کے گھاٹ اتارا

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 5th Jan.

مدھے پورہ /5جنوری (سالک کوثر امام)ضلع کے تحت مرلی گنج بلاک کی دیگھی پنچایت میں ان دنوں مسلسل خونریز لڑائی جھگڑے کا معاملہ دیکھنے کو مل رہا ہے۔  مقامی انتظامیہ زمین کا تنازعہ طے کرنے کے لاکھ دعوے کرتی رہی لیکن لاکھ دعوے کرنے کے باوجود زمین کے تنازع پر خونی لڑائی جھگڑے تھمنے کا نام نہیں لے رہیں۔ منگل کی دیر رات مرلی گنج تھانہ حلقے میں 10 دھور زمین کے لیے  قتل کر دیا گیا۔  پولیس کے ورکنگ سٹائل کے باعث ایک بار پھر زمین کے تنازع پر ایک شخص کو قتل کر دیا گیا۔  دراصل کل رات مرلی گنج تھانہ حلقہ کی دیگھی پنچایت کے وارڈ نمبر 10 کے رہنے والے 50 سالہ پربھات یادو رات کا کھانا کھا کر اپنے دروازے پر سو رہے تھے۔اسی دوران رات میں ہی بدمعاشوں نے اس پر گولی چلائی جس کی وجہ سے وہ موقع پر ہی دم توڑ گیا۔  واقعے کے بعد لواحقین نے پولیس پر بے حسی کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ قتل زمین کے تنازع پر ہوا ہے۔بتایا گیا کہ اس کا پڑوسی سے 10 دھور اراضی کا تنازع چل رہا تھا۔  جس کے حوالے سے متعدد بار تھانے میں درخواست دی گئی لیکن اہل علاقہ نے پنچایت کرکے معاملہ رفع دفع کردیا۔  مقتول کے لواحقین نے بتایا کہ اس سے قبل بھی کئی بار لڑائی جھگڑے کے واقعات ہوچکے ہیں۔  مرلی گنج تھانے میں درخواست دینے کے باوجود کوئی قانونی کارروائی نہیں کی گئی۔  جس کی وجہ سے ملزمان کے حوصلے بہت بڑھ گئے تھے۔  ویسے کئی گاؤں والوں نے بڑا الزام لگایا کہ اس بلاک کی کسی بھی پنچایت میں شام کے وقت ایک بار بھی گشت نہیں کیا جاتا، جس کی وجہ سے مجرموں کے حوصلے بڑھ گئے ہیں۔ اسے کل رات گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا تھا۔  واقعہ کی اطلاع ملتے ہی پولیس تھانہ صدر راج کشور منڈل نے فورس کے ساتھ موقع پر پہنچ کر مشتعل کنبہ والوں کو سمجھانے کے بعد لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے صدر اسپتال بھیج دیا۔  مشتعل رشتہ داروں اور گاؤں والوں نے ملزم کی گرفتاری کا مطالبہ شروع کر دیا۔  گھنٹوں کی محنت کے بعد بھی جب ناراض رشتہ دار نہ مانے تو پولیس نے اس معاملے میں پوچھ گچھ کے لیے دو خواتین کو حراست میں لے کر مزید کارروائی شروع کردی۔واقعہ کے تعلق سے پولس تھانہ صدر راج کشور منڈل نے بتایا کہ واقعہ کی اطلاع ملتے ہی ٹیم فورس کے ساتھ موقع پر پہنچ گئی اور اس معاملے میں تمام موڑ پر جانچ کی جارہی ہے۔  انہوں نے بتایا کہ متاثرہ خاندان کی تحریری درخواست کے مطابق مزید کارروائی کی جائے گی اور لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے مدھے پورہ صدر اسپتال بھیج دیا گیا ہے۔

About the author

Taasir Newspaper