Pin-Up Казино

Не менее важно и то, что доступны десятки разработчиков онлайн-слотов и игр для казино. Игроки могут особенно найти свои любимые слоты, просматривая выбор и изучая своих любимых разработчиков. В настоящее время в Pin-Up Казино доступно множество чрезвычайно популярных видеослотов и игр казино.

کھیل

عمران ملک کی 155 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے گیند،بنا نیا ریکارڈ

Written by Taasir Newspaper

Taasir Urdu News Network – Syed M Hassan 4th Jan.

نئی دہلی،04 جنوری: ہندوستان نے منگل کو وانکھیڈے میں سری لنکا کے خلاف پہلے ٹی20 میں دو رن سے زبردست جیت درج کی تو اس میں فاسٹ بولر عمران ملک نے ایک بار پھر اپنی رفتار سے متاثر کیا۔ جموں ایکسپریس کے نام سے مشہور اس تیز گیند باز نے 4 اوورز میں 27 رنز دے کر دو وکٹیں حاصل کیں۔ اس سپیل میں انہوں نے 155 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے گیند پھینکی۔ یہ میچ کی تیز ترین گیند تھی۔عمران کی تیز گیند کے سامنے داسن شاناکا کے پاس کوئی جواب نہیں تھا۔ وہ ایکسٹرا کور میں 27 گیندوں پر 45 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہوئے۔عمران اب بین الاقوامی کرکٹ کے تیز ترین باؤلر بن گئے ہیں۔ انہوں نے جسپریت بمراہ کا ریکارڈ توڑ دیا۔ بمراہ نے 153.36 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے گیند کی۔ اس کے بعد محمد شامی (153.3) اور نودیپ سینی (152.85 کلومیٹر فی گھنٹہ) کا نمبر آتا ہے۔اس میچ میں کئی کھلاڑیوں نے اپنی کارکردگی سے سرخیوں میں جگہ پائی ہے۔ دیپک ہڈا بلے بازی میں ناقابل شکست 41 رنز بنا کر میچ کے بہترین کھلاڑی بنے، پھر کیریئر کا پہلا میچ کھیلنے والے شیوم ماوی نے بھی چار وکٹیں حاصل کیں، جب کہ اکشر پٹیل کی بھی آخری اوور پھینکنے پر تعریف کی جا رہی ہے۔ لیکن اس سب کے درمیان جموں ایکسپریس عمران ملک کی رفتار نے بھی اثر چھوڑا جس کے لیے وہ جانے جاتے ہیں اور یہ اس کی رفتار تھی۔ دوسری وکٹ لینے تک عمران ملک کی کارکردگی ملی جلی رہی۔ جب وہ آخری اوور میں گیند کرنے آئے تو لنکن کپتان شناکا نے عمران پر چھکا لگایا جس سے ہندوستانی شائقین پریشان ہو گئے۔ لیکن اسی اوور کی چوتھی گیند پر ملک نے شناکا کو حیران کردیا۔ درحقیقت 17ویں اوور کی چوتھی گیند جس پر شاناکا آؤٹ ہوئے وہ میچ کی تیز ترین گیند تھی۔ جی ہاں، شاناکا نے اس گیند سے 155 کلومیٹر کی رفتار کو چھو لیا۔ ملک نے یہ کارنامہ کیا تو جلد ہی سوشل میڈیا پر موضوع بحث بن گیا۔ماوی کی بولنگ نے سری لنکا کو بیک فٹ پر ڈال دیا۔ 163 رنز کے ہدف کے تعاقب میں ماوی نے سری لنکن ٹیم کو اپنے پہلے دو اوورز میں دو وکٹیں حاصل کیں۔ ماوی نے پہلے سری لنکا کو شروع میں جھٹکا دیا اور پھر اننگز کے اختتام پر وینندو ہسرنگا اور مہیش ٹکشنا کو آؤٹ کیا۔نئے سال کی شروعات ٹیم انڈیا کے لیے اچھی رہی۔سال کے پہلے ٹی ٹوئنٹی میں ہندوستان نے سری لنکا کو 2 رنز سے شکست دی تھی۔ ہاردک پانڈیا کی کپتانی میں اوپنر ایشان کشن نے میچ میں شاندار آغاز کیا۔ ساتھ ہی اکشر پٹیل بھی میچ کے آخری اوور میں ایک تجربہ کار بالر کی طرح نظر آئے۔ سری لنکا کو دلچسپ میچ میں آخری 6 گیندوں پر 13 رنز درکار تھے لیکن اکشر کی سخت گیند بازی کی وجہ سے سری لنکن ہدف کا تعاقب نہ کر سکے۔ میچ کے دوران کئی ایسے لمحات آئے جب ایسا لگ رہا تھا کہ میچ ہندوستانی کھلاڑیوں کے ہاتھوں سے نکل سکتا ہے۔ اس دوران کیچز بھی چھوٹ گئے۔پہلے ہاردک کی کامیابی پر ایک نظر… کپتانی میں جیت کا 100فیصد ریکارڈ بنایا: ہاردک نے پہلی بار 2022 میں آئرلینڈ کے خلاف تین میچوں کی سیریز میں ہندوستان کی کپتانی کی۔ اس کے بعد نیوزی لینڈ کے خلاف ٹی ٹوئنٹی سیریز میں ٹیم ان کی کپتانی میں آئی۔ ہاردک کی کپتانی میں ہندوستان نے اب تک 5 ٹی 20 میچ کھیلے ہیں۔ ان میں سے 4 جیتے اور ایک میچ برابر رہا۔سنسنی خیز مقابلے میں سری لنکا کو آخری 6 گیندوں پر 13 رنز درکار تھے۔ کپتان ہاردک پانڈیا نے آخری اوور اکشر پٹیل کو دیا۔ انہوں نے پہلی گیند وائیڈ کرائی۔ اگلی گیند پر ایک گول آیا۔ دوسری گیند ایک ڈاٹ تھی۔ تیسری گیند پر کرونارتنے نے مڈ وکٹ پر چھکا لگایا۔ آخری 3 گیندوں پر 5 رنز درکار تھے۔ چوتھی گیند ڈاٹ تھی۔ پانچویں گیند پر سنگل آیا اور راجیتھا رن آؤٹ ہو گئے۔ اب آخری گیند پر 4 رنز درکار تھے۔ اکشر وکٹ کے اوپر آئے اور اچھی لینتھ گیند پھینکی۔ کرونارتنے نے شاٹ کھیلنے کی کوشش کی لیکن گیند سیدھی مڈ وکٹ پر کھڑے دیپک ہوڈا کے ہاتھ میں چلی گئی۔ ہڈا وکٹ کیپر کی طرف پھینکتا ہے۔ سری لنکا کو صرف ایک رن ملا اور ٹیم 2رنز سے میچ ہار گئی۔اوپنر ایشان کشن نے ٹاس ہارنے کے بعد ٹیم انڈیا کو پہلے بلے بازی کرنے کا موقع دیا۔ انہوں نے پہلے اوور میں ایک چھکا اور 2 چوکے لگا کر مجموعی طور پر 16 رنز بنائے۔ ہندوستان کو اس اوور میں وائیڈ کے ساتھ 17 رنز ملے۔ دوسری جانب ایشان پہلے اوور میں سب سے زیادہ رنز بنانے والے تیسرے ہندوستانی بن گئے ہیں۔ ہندوستان کے لیے ٹی 20 انٹرنیشنل کے پہلے ہی اوور میں سب سے زیادہ رنز 2009 میں بنائے گئے تھے۔ اس کے بعد وریندر سہواگ نے 19 رنز بنائے۔ 2018 میں ٹیم نے جنوبی افریقہ کے خلاف بھی 18 رنز بنائے ہیں۔ اسی طرح روہت شرما نے 2018 میں جنوبی افریقہ کے خلاف 17 رنز بنائے تھے۔

About the author

Taasir Newspaper