موٹر سائیکل پر سوار دو نقاب پوش بدمعاشوں نے اسکول جا رہی طالبہ پر چاقو سے حملہ کر زخمی کیا

TAASIR NEWS NETWORK- SYED M HASSAN –16 SEPT     

  سنگھواڑہ دربھنگہ (محمد مصطفی) مقامی تھانہ علاقہ کے +2 رام پورہ پروجیکٹ گرلز ہائی اسکول کی 10 ویں جماعت کی طالبہ سنیہا کماری 17 سالہ پر دن کے اُجالے میں دو نقاب پوش بدمعاشوں نے اسکول جا رہی طالبہ پر چاقو سے حملہ کر زخمی کردیا   یہ واقعہ جمعہ کی صبح 9.30 بجے لال پور سمری سڑک پر، ویران گاچھی کے قریب، اسکول سے صرف سو گز پیچھے پیش آیا۔کمیونٹی ہیلتھ سنٹر سنگھواڑہ میں زیر علاج زخمی طالبہ کی بائیں ران اور اس کے کپڑوں پر خون کے نشانات تھے۔اسنیہا منیکولی پنچایت باشندہ سنتوش ٹھاکر کی بیٹی ہے سنتوش ٹھاکر سنگھواڑہ تھانے میں پی ایل لیگل سرویس اتھارٹی کی پوسٹ پر تعینات ہے۔اسنیہا نے پولیس کو بتایا کہ اسکول آتے ہوئے جمعہ کو گھر، وہ لال پور چوک پر اتری۔  وہاں سے پیدل ہی جا رہی تھی  اسی دوران لال پور چوک سے آگے بڑھتے ہوئے دو نوجوانوں نے پیشن پرو موٹر سائیکل پر سوار ہو کر چہروں پر رومال باندھ کر گاڑی کی رفتار کم کی اور قریب پہنچ کر میرا ہاتھ اپنے جبڑوں سے پکڑ لیا، میں نے احتجاج کیا تو وہ دونوں آگے بڑھ گئے۔ اور مجھے سکول سے سو گز پیچھے ایک ویران گاچھی کے قریب اس نے اپنے قریب سے چاقو نکالا اور اسے ڈرانا شروع کر دیا، جھگڑے کے دوران موٹر سائیکل نیچے گر گئی اس کے بعد اس نے مجھے دھکا دیا اور میں گر گئی اور جب میں اُٹھی تو ایک نوجوان مجھے ڈرانا شروع کر دیا، دھکے مارنے کے درمیان موٹر سائیکل نیچے گر گئی پھر ایک نوجوان نے ہاتھ میں چاقو لے کر مجھ پر حملہ کر دیا جس کے سبب دائیں ران زخمی ہو گیا اور خون بہہ نے لگا اسی دوران ایک سرخ رنگ کی چیز پھینکی گئی جس کا میرے کپڑوں پر نشان ہے۔جس نوجوان نے مجھ پر چاقو سے حملہ کیا اس کے دائیں ہاتھ پر ٹیٹو کا نشان بنا تھا دونوں نوجوانوں کی عمریں 20 سے 25 سال کے درمیان تھیں، انہوں نے مختلف کالے اور پیلے رنگ کی ٹی شرٹیں پہن رکھی تھیں۔ واردات کے بعد دونوں بدمعاش موٹر سائیکل لے کر لال پور کی طرف فرار ہو گئے۔  ڈاکٹر پریم چند پرساد نے بتایا ہے کہ طالب علم کی دائیں ران پر زخم کے نشانات اور کپڑوں پر خون کے دھبے پائے گئے ہیں، جسم پر زخموں کے نشانات بھی ہیں، سیلائن انفیوژن کے ساتھ ایکسرے بھی کیا جا رہا ہے۔ خطرے سے باہر..  طالب علم سے پوچھ گچھ کی بنیاد پر سنگھوار ہ تھانے کی پولیس نے بدمعاش کی تلاش تیز کر دی ہے۔  پروجیکٹ گرلز ہائی اسکول کے پرنسپل دیوناتھ پرساد نے اسپتال پہنچ کر طالبہ سے واقعے کی جانکاری حاصل کی۔انہوں نے بتایا کہ اسنیہا کماری (17) جو کہ دسویں جماعت کی طالبہ ہے جو منیکولی کے رہنے والے سنتوش ٹھاکر کی بیٹی ہے