کوٹا: گرلز ہاسٹل کے کمرے سے ملی کوچنگ کی طالبہ کی لاش، اس سال 24 طالبات نے کی خودکشی

TAASIR NEWS NETWORK- SYED M HASSAN –13 SEPT     

کوٹہ،13ستمبر:کوٹہ سے ایک بار پھر ایک افسوسناک واقعہ سامنے آیا ہے۔ کوٹا میں کوچنگ لے رہی ایک طالبہ کی لاش گرلز ہاسٹل سے برآمد ہوئی ہے۔ معلومات کے مطابق، طالب علم

NEET کی تیاری کے لیے صرف 5 ماہ قبل جھارکھنڈ سے آیا تھا۔ کوٹا میں کوچنگ طالب علم کی خودکشی کا معاملہ تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے۔ وگیان نگر تھانہ علاقہ میں رہنے والے ایک کوچنگ طالب علم نے خودکشی کر لی ہے، جو صرف 5 مہینے پہلے کوٹا آیا تھا اور NEET کی تیاری کر رہا تھا۔ پولس معاملے کی جانچ میں مصروف ہے۔اس سال اب تک کوٹہ میں 24 طلباء￿ خودکشی کر چکے ہیں۔ کوٹا میں خودکشی کے بڑھتے واقعات کی وجہ سے کوٹا لگاتار سرخیوں میں ہے۔ وزیر اعلیٰ کی ہدایات کے بعد ریاستی سطح کی کمیٹی بھی تشکیل دی گئی ہے۔ کئی رہنما خطوط بھی جاری کیے گئے ہیں، لیکن کوچنگ طلبا کی خودکشی کا سلسلہ تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے۔ وگیان نگر تھانے کے اے ایس آئی امر کمار نے بتایا کہ کوچنگ کرنے والا طالب علم اصل میں رانچی، جھارکھنڈ کا رہنے والا ہے۔ وہ مئی میں ہی الیکٹرانک کمپلیکس میں واقع ہاسٹل میں رہنے آئی تھی۔طالبہ شام کو باہر نہیں آرہی تھی جس کے بعد دروازہ توڑا گیا۔ پولیس کو اطلاع ملی تھی کہ ایک طالبہ نے پھانسی لگا لی ہے، جسے اسپتال لایا گیا اور اسے مردہ قرار دے دیا۔ اطلاع ملتے ہی پولیس فوراً موقع پر پہنچ گئی۔ لاش کو پوسٹ مارٹم روم منتقل کر دیا گیا۔ پولیس کے مطابق ابتدائی معلومات سے معلوم ہوا ہے کہ طالبہ شام گئے سے اپنے کمرے سے باہر نہیں آرہی تھی، اس کے بعد اس کی ساتھی طالبہ نے الارم بجایا، اس پر بھی طالبہ کی جانب سے کوئی جواب نہ آیا تو ہاسٹل آپریٹر کو بلایا گیا اور بعد میں جب میں نے دروازہ توڑا تو دیکھا کہ وہ لٹک رہی تھی۔ پولیس کے مطابق لواحقین کو اطلاع کر دی گئی ہے اور معاملے کی تحقیقات کی جا رہی ہیں، لواحقین کے آنے کے بعد پوسٹ مارٹم کرایا جائے گا۔