ویلور انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی، انجینئرنگ کے داخلہ امتحان کے نتائج کا اعلان

تاثیر،۱۰       مئی ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

ہریانہ کے روپندر سنگھ کوپہلا ، راجستھان کے بھانو مہیش چیکوری کو دوسرا اور آندھرا پردیش کے ویدانت کو تیسرا مقام 
چنئی، 10مئی (نمائندہ)  ویلور انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی، انجینئرنگ کے داخلہ امتحان کے نتائج کا اعلان ہو گیا ہے۔ہریانہ کے روپندر سنگھ نےپہلا ،  راجستھان کے بھانو مہیش چیکوری نے دوسرا اور آندھرا پردیش کے اے ویدانت نے تیسرا مقام حاصل کیا ہے۔اسی طرح چوتھا رینک آسام کی محترمہ آیوشی بید نے، پانچواں رینک اتر پردیش کی محترمہ سانوی سنگھ نے ،  چھٹا رینک مہاراشٹر کے مسٹر ابھیراج رماکانت یادو نے، ساتواں رینک اتراکھنڈ کے مسٹر چیتنیا رمیش بوچرے نے،آٹھواں رینک اتر پردیش کے مسٹر وکی کمار سنگھ نے ،  نواں رینک ہماچل پردیش کے مسٹر سوہن ہزارا نے دسواں رینک بہار کے مسٹر ساحل نے حاصل کی ہے۔یہ  اطلاع انسٹی ٹیوٹ  کے ذریعہ جاری ایک پریس ریلیز میں دی گئی ہے۔
اطلاع کے مطابق ویلور انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی میں بی ٹیک انجینئرنگ کے لئے داخلہ امتحان19 سے 30 اپریل تک منعقد ہوا تھا ۔اس امتحان میںملک کے 125  اور بیرون ملک کے6 شہروں  (دبئی، کویت، مسقط، قطر، کوالالمپور اور سنگاپور)  کے امیدواروں نے شرکت کی تھی اور کمپیوٹر پر مبنی پراکٹرڈ امتحان دیا تھا۔امتحان کے رزلٹ کا اعلان ہوگیا ہے۔ کامیاب امیدواروں میں، جن کی رینکنگ ایک لاکھ کے اندر ہے وہ بالترتیب بی آئی ٹی گروپ آف انسٹی ٹیوشنز بی آئی ٹی ویلور، بی آئی ٹی و چنئی ،  بی آئی ٹی واے پی، بی آئی ٹی بھوپال کے بی ٹیک پروگراموں میں داخلہ کے لیے  کونسلنگ میں حصہ لے سکتے ہیں۔
رینک 1-20,000 کے لیے کاؤنسلنگ 7 سے 10 مئی تک منعقد ہوگی۔ جبکہ 20,001-45,000 رینک کے لیے   کونسلنگ 18 سے 21 مئی تک ہوگی ۔۔  رینک 45,001-70,000 کے لئے کونسلنگ کا مرحلہ 29 مئی سے شیڈولڈ ہے۔  رینک 70,001-1,00,000 کے لئے چوتھے مرحلے کی کونسلنگ 9 سے 12 جون تک ہوگی ۔پریس  ریلیز میں کہا گیا ہے کہ جن لوگوں کا رینک ایک لاکھ سے زیادہ ہے وہ صرف بی آئی ٹی اے پی اور  بی آئی ٹی اے پیبھوپال کے بی ٹیک پروگراموں میں کونسلنگ کے اہل ہوں گے۔ اس رینک کے لیے کونسلنگ کا پانچواں مرحلہ 20 سے 23 جون تک منعقد کیا جائے گا۔ کلاسز جولائی 2024 کے دوسرے ہفتے سے شروع ہونے والی ہیں۔
جن طلباء نے سب سے اوپر وی آئی ٹی ای ای ای رینک حاصل کیا ہے، انہیں چار سال کے لیے اسکالرشپ ملے گی۔ تمل ناڈو، آندھرا پردیش اور مدھیہ پردیش کے تمام اضلاع کے دیہی علاقوں کے سرکاری اسکولوں میں زیر تعلیم ڈسٹرکٹ ٹاپرز (ایک لڑکا اور ایک لڑکی) کو 100 فیصد ٹیوشن فیس کی چھوٹ اور ہاسٹل اور میس فیس سے چھوٹ دی جائے گی۔ اس کورس کے علاوہ مختلف 3 سالہ انڈرگریجویٹ پروگراموں کے لیے درخواستیں، 4 سالہ بی ایس سی۔ آنرز (زرعی)، بی آرچ، بی ڈیس۔ (صنعتی ڈیزائن)اور 5 سالہ مربوط پروگرام بھی کھلے ہیں۔طلباء مزید تفصیلات کے لیے وی آئی ٹی کی ویب سائٹ کو دیکھ سکتے ہیں۔