کسی میں ہمت نہیں کہ ریزرویشن ختم کر دے : وزیر دفاع راج ناتھ

تاثیر،۱۰       مئی ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

دمکا (جھارکھنڈ)، 10 مئی: وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے ریزرویشن کے مدعے پر اپوزیشن کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ کسی میں طاقت نہیں ہے کہ وہ ریزرویشن کو ختم کر دے ۔ راجناتھ سنگھ جمعہ کو دمکا کے یگیہ میدان میں بی جے پی امیدوار کے حق میں انتخابی ریلی سے خطاب کر رہے تھے۔وزیر اعظم نریندر مودی حکومت کی حصولیابیوں کا ذکر کرتے ہوئے راج ناتھ نے کہا کہ نریندر مودی کا خواب ہندوستان میں غربت کو ختم کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہاں شاید ہی کوئی ایسا شخص موجود ہو گا جسے پانچ کلو اناج نہیں ملتا ہے۔ساتھ ہی کہا کہ مودی حکومت نے ملک کی معیشت کو 11ویں سے پانچویں نمبر پر پہنچا دیا ہے۔

راجناتھ سنگھ نے کانگریس حکومت پر بدعنوانی کا الزام لگایا۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس کے وزرا نے جیل کی ہوا کھائی ہے۔ اپوزیشن کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اپوزیشن بی جے پی پر ریزرویشن ختم کرنے کا جھوٹا الزام عائد کرتی ہے لیکن میں کہتا ہوں کہ ہم ریزرویشن کو کبھی ختم نہیں ہونے دیں گے۔ وزیر دفاع نے چیلنج دیتے ہوئے کہا کہ اگر کسی مائی کے لال میں دم ہے تو وہ ریزرویشن کو ختم کردے۔ انہوں نے قبائلی برادری کے لوگوں کو یقین دلایا کہ آپ کی ریزرویشن کو کوئی ختم نہیں کر سکتا۔

راجناتھ نے کہا کہ جھارکھنڈ کے لوگ بھلے ہی غریب ہوں لیکن وہ اپنی عزت کو مقدم رکھتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کسی ریاست کے وزیر اعلیٰ 24 گھنٹے تک غائب ہو گئے تھے ۔ میں بھی یوپی کا وزیر اعلیٰ رہا لیکن کبھی ایسا کچھ نہیں کیا۔انہوں نے کہا کہ ہیمنت سورین نے وزیر اعلیٰ رہتے ہوئے اپنے دور میں ریاست کے لوگوں کی عزت سے کھلواڑ کیا ہے۔ اس کا سبق سکھانا ہے۔ عزت کو ٹھیس پہنچانے کا بدلہ سیتا سورین کے حق میں ووٹ دے کر لیناہے۔ ووٹ کی چوٹ سے جے ایم ایم حکومت کو سبق سکھانا ہے۔

اس کے بعد راج ناتھ سنگھ گوڈا کے امیدوار نشی کانت دوبے کے نامزدگی پروگرام میں شرکت کے لیے گوڈا روانہ ہوئے۔ قبل ازیں بی جے پی امیدوار سیتا سورین نے کلکٹریٹ کمپلیکس آفس میں ڈسٹرکٹ الیکشن آفیسر اے دوڈّے کے سامنے پرچہ نامزدگی داخل کیا۔ کاغذات نامزدگی داخل کرنے کے بعد سیتا سورین نے جے ایم ایم حکومت کو مکمل ناکام قرار دیا۔

سیتا سورین نے کہا کہ چلچلاتی گرمی میں پانی کی قلت سے لوگ پریشانی کا شکار ہیں۔ ریاست میں نل کے پانی کی اسکیم مکمل طور پر ٹھپ ہوگئی ہے۔ ٹنکی ہے، نل ہے لیکن پانی نہیں ہے۔ حکومت اس طرف توجہ نہیں دے رہی۔ ریاست میں صرف کرپشن کی گنگوتری بہہ رہی ہے۔ ریاستی وزرا اور ارکان اسمبلی کے گھروں سے چھاپوں کے دوران کروڑوں روپے کی نقدی کی برآمدگی اس کا ثبوت ہے۔ ریاست اور ملک کی ترقی پی ایم مودی کی قیادت میں ہی ہو سکتی ہے۔
اس دوران بی جے پی کے ریاستی صدر بابولال مرانڈی، ریاستی نائب صدر ڈاکٹر لیوس مرانڈی، سارٹھ کے ایم ایل اے رندھیر سنگھ اور راکیش چودھری موجود تھے۔