آتشی کی طبیعت بگڑگئی،آئی سی یو میں ہیں زیر علاج،بلڈشوگرلیول ہوگیاکم

تاثیر۲۵      جون ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

نئی دہلی، 25جون:دہلی میں پانی کی قلت کو لے کر غیر معینہ مدت کے لیے بھوک ہڑتال پر بیٹھیں وزیر برائے آب آتشی کی رات تقریباً 3 بجے اچانک طبیعت بگڑ گئی۔ اس کے بعد انہیں لوک نائک جے پرکاش نارائن اسپتال (LNJP) کے آئی سی یو میں داخل کرایا گیا۔ ان کا شوگر لیول کافی نیچے چلا گیا تھا۔ اس کے بعد انہیں فوراً میں اسپتال میں داخل کرایا گیا۔ آتشی سنگھ فی الحال ڈاکٹروں کی ٹیم کی نگرانی میں ہیں۔وزیر برائے آتشی پچھلے چار دنوں سے غیر معینہ مدت کی بھوک ہڑتال پر ہیں اور ان کا دعویٰ ہے کہ ہریانہ دہلی کو پانی کا حصہ نہیں دے رہا ہے۔ آتشی سنگھ کی طبیعت خراب ہونے کے بعد عام آدمی پارٹی کے ایم پی سنجے سنگھ، سوربھ بھردواج، عام آدمی پارٹی کے ایم ایل اے دلیپ پانڈے اور گوپال رائے بھی انہیں دیکھنے اور ڈاکٹر سے ملنے ایل این جی پی ایس اسپتال پہنچے۔عام آدمی پارٹی نے ٹویٹ کیا کہ ان کا بلڈ شوگر لیول آدھی رات کو 43 اور صبح 3 بجے 36 تک گر گیا، جس کے بعد ایل این جے پی اسپتال کے ڈاکٹروں نے انہیں فوری طور پر داخل کرنے کا مشورہ دیا۔ وہ پچھلے پانچ دنوں سے کچھ نہیں کھا رہی ہے اور ہریانہ سے دہلی کے حصے کا پانی جاری کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے غیر معینہ مدت کی بھوک ہڑتال پر ہے۔چوتھے دن، ٹی ایم سی ممبران پارلیمنٹ کا ایک وفدوزیرآب آتشی کی حمایت میں پہنچا اور ان کی مکمل حمایت کی۔ تمام ممبران پارلیمنٹ نے آتشی کی جدوجہد کو سراہا اور پارلیمنٹ میں دہلی کے ساتھ یکجہتی کے لیے آواز اٹھانے کا عہد کیا۔