اے آئی ایف ایف قطر کے خلاف متنازعہ شکست کے خلاف اپیل کرے گا

تاثیر۱۲      جون ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

نئی دہلی، 12 جون:قطر کے خلاف ہندوستان کی متنازعہ شکست کے بعد، آل انڈیا فٹ بال فیڈریشن (اے آئی ایف ایف) نے ایک بیان جاری کر تصدیق کی ہے کہ وہ میچ کے دوران ہوئی سنگین مشاہداتی غلطی کے خلاف اپیل کریں گے، جس کی وجہ سے ہندوستان کو فیفا ورلڈ کپ کوالیفائر راؤنڈ 3 جگہ بنانے سے محروم ہونا پڑا ۔ 2026 کے فیفا ورلڈ کپ میں جگہ بنانے کا خواب منگل کی رات دوحہ میں قطر کے ہاتھوں 1-2 سے شکست کے ساتھ ختم ہو گیا۔اے آئی ایف ایف کے صدر کلیان چوبے نے ایک سرکاری بیان میں کہا، “منگل کی رات فیفا 2026 اور اے ایف سی ایشین کپ 2027 کے ابتدائی مشترکہ کوالیفکیشن راؤنڈ 2 کے اختتامی میچ میں قطر کے خلاف شکست پورے ہندوستانی فٹبال برادری کے لیے بہت بڑی مایوسی تھی۔ جیت اور “شکست کھیل کا لازمی حصہ ہیں، اور ہم نے انہیں خوش اسلوبی سے قبول کرنا سیکھ لیا ہے، لیکن گزشتہ رات ہندوستان کے خلاف کیے گئے دو گولوں میں سے ایک نے کچھ سوالات کے جواب باقی ہیں۔
میچ کے 37ویں منٹ میں لالیانزوالا چھانگٹے نے گول کر کے ہندوستان کو 1-0 کی برتری دلا دی۔ پہلے ہاف کے اختتام پر ہندوستان کو 1-0 کی برتری حاصل تھی۔
دوسرے ہاف میں میچ کے 75ویں منٹ میں قطر کی جانب سے یوسف ایمن نے نیٹ کے پیچھے سے گول کر دیا۔ گرپریت نے ایمن کے ہیڈر کو بچانے کے بعد ہندوستانی کھلاڑیوں کو لگا کہ گیند باہر ہو گئی ہے۔ ریفری کی سیٹی نہیں بجی اور بھارتی کھلاڑیوں نے احتجاج شروع کر دیا۔ ویڈیو اسسٹنٹ ریفری کی غیر موجودگی میں ریفری نے اسسٹنٹ ریفری سے مشورہ لیا۔ گول دے دیا گیا لیکن ری پلے سے صاف ظاہر ہوا کہ گیند کھیل سے باہرچلی گئی تھی۔چوبے نے کہا، “ہم، آل انڈیا فٹ بال فیڈریشن میں، ہمیشہ یہ مانتے رہے ہیں کہ کھیل کی روح کو برقرار رکھا جانا چاہئے اور بغیر کسی شک کے قواعد پر عمل کیا جانا چاہئے۔ اسی موقف کو برقرار رکھتے ہوئے، ہم نے قطر کے خلاف کھیل کے بعد اپنے چیف ریفری آفیشل کی مشاورت سے، فیفا کوالیفائرز کے سربراہ، اے ایف سی ہیڈ آف ریفریز، اے ایف سی مقابلوں کے سربراہ اور کھیل کے میچ کمشنر کو خط لکھنے کا فیصلہ کیا، جس میں ان سے کھیل کے دوعران ہوئی سنگین مشاہداتی غلطیوں پر غور کرنے کی درخواست کی گئی ۔جس کے سبب ہمیں فیفا عالمی کپ کوالیفائر راؤنڈ تھری میں جگہ گنوانی پڑی۔ قطر نے یہ میچ جیت کر ہندوستان کو پہلی بار فیفا ورلڈ کپ کوالیفائر کے تیسرے راؤنڈ میں جانے سے روک دیا۔ اس شکست کا مطلب یہ بھی ہے کہ ہندوستان اے ایف سی ایشین کپ 2027 کے لیے خودکار طور پر اہلیت حاصل نہیں کر پائے گا۔چوبے نے کہا، “اس کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے، ہم نے تمام متعلقہ حکام سے اس معاملے کی مکمل تحقیقات کرنے کی درخواست کی ہے۔ مزید برآں، ہم نے ان پر زور دیا ہے کہ وہ ناانصافی کو دور کرنے کے لیے کھیلوں کے معاوضے کے امکانات کی تلاش کی اپیل کی ہے۔ “کھیل کی سالمیت کو یقینی بنانا سب سے اہم ہے، ہمیں یقین ہے کہ فیفا اور اے ایف سی اس سلسلے میں ضروری اقدامات کریں گے۔”