روینہ ٹنڈن کی فرضی روڈ ریج ویڈیو شیئر کرنے والے کے خلاف کارروائی، ہتک عزت کا دعویٰ

تاثیر۱۵      جون ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

ممبئی ،15 جون :حال ہی میں ایک شخص نے بالی ووڈ اداکارہ روینہ ٹنڈن کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر پوسٹ کی جس میں دعویٰ کیا گیا کہ روینہ ٹنڈن نے نشے کی حالت میں ایک بزرگ کو اپنی گاڑی سے ٹکر ماری اور جب اس بزرگ خاتون سے سوال کیا تو اس کی پٹائی بھی کی۔ تاہم معاملے کی تحقیقات کے بعد ممبئی پولیس نے کہا ہے کہ اداکارہ کے نشے میں دھت ہونے، لاپرواہی سے گاڑی چلانے اور بزرگ خاتون کے ساتھ زیادتی کے الزامات جھوٹے ہیں۔ اب اداکارہ نے ویڈیو پوسٹ کرنے والے شخص کے خلاف کارروائی کی ہے۔اداکارہ روینہ ٹنڈن نے روڈ ریج کیس میں پوسٹ کی گئی ویڈیو کو ڈیلیٹ نہ کرنے پر ہتک عزت کی شکایت درج کرائی ہے اور مذکورہ شخص کو قانونی نوٹس بھیجا ہے۔ ہتک عزت کا نوٹس 12 جون کو بھیجا گیا تھا۔ روینہ ٹنڈن کی وکیل ثنا خان نے میڈیا کو بتایا کہ ان تمام حالیہ کیسز میں صرف روینہ ٹنڈن کو جھوٹے الزامات میں پھنسانے کی کوشش کی گئی۔پولیس کی تفتیش اور سی سی ٹی وی سے روینہ ٹنڈن پر لگائے گئے الزامات کے جھوٹے ہونے کے انکشاف کے بعد اداکارہ نے مذکورہ ویڈیو کو انٹرنیٹ سے ہٹانے کا مطالبہ کیا۔ روینہ ٹنڈن کی جانب سے ویڈیو پوسٹ کرنے والے شخص سے ویڈیو ہٹانے کو کہا گیا۔ تاہم جب اس شخص نے ویڈیو ڈیلیٹ کرنے سے انکار کیا تو اداکارہ نے اس شخص کو ہتک عزت کا نوٹس بھیج دیا۔ بالی ووڈ اداکارہ روینہ ٹنڈن کی وکیل ثنا خان نے کہا ہے کہ ان کی شبیہ کو خراب کرنے کے لیے یہ جعلی خبر جان بوجھ کر پھیلائی جا رہی ہے۔سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ایک ویڈیو میں اس شخص نے دعویٰ کیا کہ روینہ ٹنڈن کی گاڑی نے اس کی والدہ کو اس وقت ٹکر ماری جب وہ رات کو سڑک پر چل رہی تھیں اور جب ان سے سوال کیا گیا تو جھگڑا ہوگیا اور اداکارہ نے ان کی ماں کو مارا۔ اس شخص نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب اس کی ماں، بہن اور بھانجی ان کے گھر کے قریب سے چل رہی تھیں۔ تاہم پولیس نے واضح کیا ہے کہ اداکارہ کے خلاف یہ تمام الزامات جھوٹے ہیں۔ جس کے بعد اداکارہ روینہ ٹنڈن نے اس شخص کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ دائر کر دیا ہے۔