سپریم کورٹ میں ایک اور عرضی دائر ،نیٹ کا داخلہ امتحان دوبارہ کرانے کا مطالبہ

تاثیر۱۰       جون ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

نئی دہلی ، 09 جون:نیٹ کے داخلہ امتحان کے خلاف سپریم کورٹ میں ایک نئی عرضی داخل کی گئی ہے۔ آندھرا پردیش کے رہائشی عبداللہ محمد فیض اور دیگر کی جانب سے ایک عرضی دائر کی گئی ہے، جس میں 5 مئی کو منعقد ہونے والے نیٹ امتحان کو منسوخ کرنے اور دوبارہ امتحان منعقد کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ عرضی میں پورے معاملے کی ایس آئی ٹی سے جانچ کرانے کی مانگ کی گئی ہے۔
عرضی میں 5 مئی کو منعقد ہونے والے اور 4 جون کو اعلان کردہ نیٹ امتحان کے نتائج کی بنیاد پر کونسلنگ پر پابندی لگانے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ اس سے پہلے طالب علم شیوانگی مشرا اور دیگر نے سپریم کورٹ میں عرضی داخل کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ نیٹ کا امتحان نئے سرے سے کرایا جائے۔نیٹ امتحان میں پیپر لیک اور دھاندلی کے الزامات کے بعد یہ ایک بڑا مسئلہ بن گیا ہے۔ امتحانات کا انعقاد کرنے والے ادارے این ٹی اے نے امتحان میں پیپر لیک یا دھاندلی کے الزامات کو یکسر مسترد کر دیا ہے۔