قنوج میں آگرہ لکھنؤ ایکسپریس وے سے بس گری، جونپور کے 12 افراد زخمی

تاثیر۲۳      جون ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

جونپور، 23 جون : اتر پردیش کے قنوج میں اتوار کی صبح آگرہ لکھنؤ ایکسپریس وے سے مسافروں سے بھری ایک ڈبل ڈیکر بس نیچے گر گئی۔ حادثے کے وقت بس میں کل 45 افراد سوار تھے۔ جس میں 12 لوگ جونپور ضلع کے تھے۔
جونپور سے دہلی جا رہی ڈبل ڈیکر بس آگرہ لکھنؤ ایکسپریس وے پر قنوج کے سوریکھ تھانہ علاقے کے کلومیٹر نمبر 159 کے قریب بے قابو ہو کر نیچے گر گئی۔ یہ واقعہ صبح 4 بجے پیش آیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ یہ حادثہ ڈرائیور کو نیند آنے کی وجہ سے پیش آیا۔ جونپور کے کچھ زخمی لوگوں کے ساتھ بات چیت ہوئی، جس میں زخمی راہل تیواری نے ہندوستھان سماچار سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنی اہلیہ اور خاندان کے ساتھ ورنداون جانے والے تھے۔ راستے میں بس نیچے گر گئی تو ہماری آنکھ کھل گئی۔ صبح کا وقت تھا اور ہم سب سو رہے تھے لیکن اچانک اتنی زور کی آواز آنے لگی کہ سب ڈر گئے اور زور زور سے چیخنے لگے۔ لیکن بھگوان کی مرضی سے ہم بچ گئے، ہمیں صرف معمولی زخم آئے، اسی لائن بازار تھانے کے نیوادا کے رہنے والے زخمی وکاس موریا نے بتایا کہ آج ہماری بہن کی دوپہر 12 بجے دہلی سے ویتنام کی فلائٹ تھی۔ ہم اسے چھوڑنے جا رہے تھے۔ ہماری بہن کے شوہر سنیل موریا ویتنام میں رہتے ہیں اور کام کرتے ہیں۔ ہماری بہن پورنیما موریہ اور اس کا 6 سال کا بچہ وہاں موجود تھا۔ اسے معمولی چوٹیں بھی آئی ہیں۔ جب حادثہ ہوا تو آواز اتنی بلند تھی جیسے کوئی بم پھٹا ہو۔ بس کے نیچے گرنے کے بعد لوگ خوفزدہ ہوگئے اور کئی لوگ بے ہوش ہوگئے۔ پورنیما نے بتایا کہ حادثے کے بعد بس ڈرائیور کا کوئی سراغ نہیں ملا۔ آج ہم فلائٹ سے ویتنام جانے والے تھے اور اب واپس اپنے گھر جونپور آ رہے ہیں۔