وزیر اعظم مودی کی حلف برداری تقریب کے پیش نظر سیکورٹی کے بے مثال انتظامات، قومی دارالحکومت دہلی کل اور پرسوں نو فلائی زون قرار

تاثیر۸       جون ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

نئی دہلی، 8 جون: دہلی پولیس نے وزیر اعظم نریندر مودی کی تقریب حلف برداری کے پیش نظر سیکورٹی کے بے مثال انتظامات کئے۔ قومی دارالحکومت دہلی کو کل اور پرسوں (9 اور 10 جون) کے لیے نو فلائی زون قرار دیتے ہوئے امتناعی احکامات نافذ کیے گئے ہیں۔ دہلی پولیس کمشنر سنجے اروڑہ نے جمعہ کو اس سلسلے میں ایک حکم جاری کیا۔ مودی اتوار کو شام 7.15 بجے وزیر اعظم کے طور پر اپنی تیسری مدت کے لیے حلف لیں گے۔ اس موقع پر صدر جمہوریہ دروپدی مرمو وزراء￿ کونسل کے کچھ ارکان کو بھی عہدے اور رازداری کا حلف دلائیں گی۔
بتایا گیا ہے کہ حلف برداری کی تقریب کے پیش نظر کثیر سطحی حفاظتی انتظامات ہوں گے۔ راشٹرپتی بھون کی حفاظت کے لیے نیم فوجی دستوں کی پانچ کمپنیاں، نیشنل سیکورٹی گارڈ (این ایس جی) کے کمانڈوز، ڈرون اور اسنائپرز کو تعینات کیا جائے گا۔ حکام کے مطابق سارک (جنوبی ایشیائی علاقائی تعاون کی تنظیم) کے رکن ممالک کے معززین کو حلف برداری کی تقریب میں مدعو کرنے کے پیش نظر قومی دارالحکومت ہائی الرٹ رہے گا۔
پولیس کمشنر اروڑہ نے حکم نامے میں کہا ہے کہ ’’یہ اطلاع ملی ہے کہ ہندوستان سے دشمنی رکھنے والے کچھ مجرم، سماج دشمن عناصر یا دہشت گرد عام لوگوں، معززین اور اہم اداروں کی سلامتی کے لیے خطرہ بن سکتے ہیں۔‘‘ اس مرتبہ وزیر اعظم نریندر مودی کی تیسری حلف برداری کی تقریب میں بنگلہ دیش، سری لنکا، مالدیپ، بھوٹان، نیپال، ماریشس اور سیشلز کے رہنماوں کی شرکت متوقع ہے۔ دہلی پولیس نے پہلے ہی لیلا، تاج، ا?ئی ٹی سی موریہ، کلیریجز اور اوبرائے جیسے ہوٹلوں کو حفاظتی حصار میں لے لیا ہے۔ حلف برداری کی تقریب کے دن دہلی پولیس کے سواٹ اور این ایس جی کے کمانڈوز راشٹرپتی بھون اور مختلف اہم مقامات کے ارد گرد تعینات رہیں گے۔
ایک سینئر پولیس افسر کا کہنا ہے کہ یہ تقریب راشٹرپتی بھون کے اندر منعقد ہونی ہے، اس لیے کمپلیکس کے اندر اور باہر تین درجے کی سیکورٹی ہوگی۔ دہلی پولیس کے جوان باہری حدود میں تعینات رہیں گے۔ اس کے بعد پیرا ملٹری فورس کے جوان اور راشٹرپتی بھون کے داخلی سیکورٹی اہلکاروں کو اندرونی دائرے میں تعینات کیا جائے گا۔
حکام کا کہنا ہے کہ دہلی کے وسطی حصے کی طرف جانے والی کئی سڑکیں اتوار کو بند ہو سکتی ہیں یا صبح سے ہی ٹریفک کو تبدیل کیا جا سکتا ہے۔ اس کے علاوہ ہفتہ سے ہی قومی دارالحکومت کی سرحدوں پر چیکنگ بڑھا دی جائے گی۔ قابل ذکر ہے کہ مودی مسلسل تیسری بار وزیر اعظم کے عہدے کا حلف لیں گے۔ لوک سبھا انتخابات میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی قیادت والی قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) نے 293 سیٹیں جیت کر اکثریت حاصل کر لی ہے۔