چاردھام یاترا کے دوران مرنے والوں کی تعداد میں اضافہ، ایک ماہ میں 100 یاتریوں کی جان گئی

تاثیر۹       جون ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

دہرادون، 09 جون :اتراکھنڈ میں چاردھام یاترا ہموار طریقے سے چل رہی ہے۔ ہر روز ہزاروں کی تعداد میں عقیدت مند چار دھاموں کی زیارت کے لیے آرہے ہیں۔ دوسری جانب چاردھام یاترا کے لیے آنے والے عقیدت مندوں کی اموات کی تعداد بھی مسلسل بڑھ رہی ہے۔ 10 مئی سے شروع ہونے والی چاردھام یاترا کے دوران اب تک 100 یاتریوں کی موت ہو چکی ہے۔
یاتریوں کی موت کی رپورٹ ریاستی ایمرجنسی آپریشن سینٹر نے اتوار کو سیکرٹریٹ میں واقع کنٹرول روم سے جاری کی ہے۔ ریاستی ایمرجنسی آپریشن سینٹر کے مطابق، کپاٹ کھلنے کے بعد کیدارناتھ میں سب سے زیادہ 49 یاتریوں کی موت ہوئی ہے۔ اس کے بعد بدری ناتھ میں 22، یمنوتری میں 22 اور گنگوتری میں سات عقیدت مند یاترا کے دوران اپنی جان گنوا چکے ہیں۔
یاتریوں کی اموات کی بڑھتی ہوئی تعداد کے بارے میں محکمہ صحت کے حکام کا کہنا ہے کہ یاترا کے دوران ہونے والی اموات کے زیادہ تر واقعات میں بوڑھے اور وہ لوگ شامل ہیں جو پہلے ہی کسی نہ کسی بیماری میں مبتلا ہیں۔ محکمہ صحت کا دعویٰ ہے کہ چاردھام یاترا سے پہلے یاتریوں کی اسکریننگ کی جارہی ہے۔ محکمہ کے مطابق اب تک تقریباً دو لاکھ عقیدت مندوں کی اسکریننگ کی جا چکی ہے۔ اس کے باوجود بڑی تعداد میں یاتری اپنی بیماری چھپا کر یاترا کے لیے آرہے ہیں۔