ہماچل پردیش کے چھ نو منتخب ایم ایل اے نے حلف لیا

تاثیر۱۲      جون ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

شملہ، 12 جون:ہماچل پردیش اسمبلی کی چھ نشستوں پر ہونے والے ضمنی انتخابات میں منتخب ہونے والے ایم ایل ایز نے بدھ کو حلف لیا۔ اسمبلی کے اسپیکر کلدیپ سنگھ پٹھانیا نے انہیں عہدے اور رازداری کا حلف دلایا۔ اسمبلی سکریٹریٹ کے لائبریری روم میں منعقدہ تقریب حلف برداری میں کانگریس کے چار اور بی جے پی کے دو ارکان اسمبلی نے حلف لیا۔لاہول اسپتی سے کانگریس کی انورادھا رانا، گگریٹ سے راکیش کالیا، کٹلیہار سے وویک شرما اور سوجن پور سے رنجیت رانا اور دھرم شالہ سے بی جے پی کے سدھیر شرما اور بدسر سے اندرا دت لکھن پال نے حلف لیا۔ حلف لینے کے بعد نومنتخب ایم ایل اے نے کہا کہ وہ عوام کے آشیرواد سے اسمبلی میں پہنچے ہیں اور علاقے کے مسائل کو حکومت کے سامنے بھرپور طریقے سے اٹھایا جائے گا۔ حکومت کے تعاون سے علاقے کی ترقی کو آگے بڑھانے کی کوشش کی جائے گی۔
وزیر اعلی سکھویندر سنگھ سکھو نے کہا کہ بی جے پی 4 جون کو ہماچل میں حکومت بنانے کا دعویٰ کر رہی تھی لیکن عوام نے کانگریس کو اپنا آشیرواد دیا اور چار سیٹوں پر کانگریس کے امیدوار جیت گئے۔ حکومت مضبوط ہو چکی ہے اور عوام کے لیے مضبوطی سے کام کرے گی۔اپوزیشن لیڈر جے رام ٹھاکر نے کہا کہ بی جے پی نے لوک سبھا انتخابات اور اسمبلی ضمنی انتخابات میں ریاست میں اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے۔ بی جے پی نے ریاست کی تمام چار لوک سبھا سیٹیں جیت لی ہیں جبکہ پارٹی نے اسمبلی ضمنی انتخابات میں دو سیٹیں جیتی ہیں۔ بی جے پی کو ریاست کے 68 ممبران اسمبلی میں سے 61 سیٹوں پر برتری حاصل ہے۔