جے شنکر نے چین کے وزیر خارجہ سے ملاقات کی، سرحدی تنازعہ پر تبادلہ خیال کیا

تاثیر۴      جولائی ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

نئی دہلی، 04 جولائی: وزیر خارجہ ڈاکٹر ایس جے شنکر نے جمعرات کو قازقستان کے آستانہ میں شنگھائی تعاون تنظیم کے اجلاس کے موقع پر چینی وزیر خارجہ وانگ یی سے ملاقات کی۔ وزیر خارجہ جے شنکر نے اپنے ہم منصب سے کہا کہ ہندوستان اور چین کے تعلقات باہمی احترام، حساسیت اور مفادات کو ذہن میں رکھ کر ہی بہتر ہو سکتے ہیں۔ ایسی صورتحال میں لائن آف ایکچوئل کنٹرول کا احترام اور سرحدی علاقوں میں امن کو یقینی بنایا جائے۔وزیر خارجہ نے فوجی تعطل کو کم کرنے اور مشرقی لداخ کے بقیہ علاقوں کے ساتھ سرحد پر امن بحال کرنے کی کوششوں کو دوگنا کرنے کی ضرورت پر روشنی ڈالی تاکہ دو طرفہ تعلقات میں معمول پر آنے کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کیا جا سکے۔ دونوں وزراءنے اس بات پر اتفاق کیا کہ سرحدی علاقوں کی موجودہ صورتحال کو زیادہ دیر تک جاری رکھنا دونوں فریقوں کے مفاد میں نہیں ہے۔
وزارت خارجہ کے مطابق دونوں وزراء نے عالمی صورتحال پر بھی تبادلہ خیال کیا۔ وزیر خارجہ جے شنکر نے چینی وزیر خارجہ وانگ یی کو اگلے سال چین کی صدارت میں ایس سی او کے لیے ہندوستان کی حمایت سے آگاہ کیا۔دوطرفہ تعلقات کو مستحکم کرنے اور دوبارہ ہموار کرنے کے لیے مشرقی لداخ میں لائن آف ایکچوئل کنٹرول (ایل اے سی) کے ساتھ بقایا مسائل کا جلد از جلد حل تلاش کرنے پر خیالات کا تبادلہ کیا۔ انہوں نے ماضی میں دونوں حکومتوں کے درمیان طے پانے والے متعلقہ دوطرفہ معاہدوں، پروٹوکولز اور مفاہمت کی اہمیت کو اجاگر کیا۔دونوں وزراء نے بقیہ مسائل کو جلد از جلد حل کرنے کے لیے اپنی بات چیت کو آگے بڑھانے کے لیے دونوں اطراف کے سفارتی اور فوجی حکام کی ملاقاتوں کو جاری رکھنے اور بڑھانے پر اتفاق کیا۔ اس مقصد کے لیے بھارت چین سرحدی معاملات پر مشاورت اور رابطہ کاری کے طریقہ کار (ڈبلیو ایم سی سی) کا جلد اجلاس منعقد کرنے پر بھی اتفاق کیا۔