راجستھان کے وزیر زراعت ڈاکٹر کیروڑی لال مینا نے کابینہ سے استعفیٰ دے دیا

تاثیر۴      جولائی ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

جے پور، 04 جولائی :۔ راجستھان کے وزیر زراعت اور بھارتیہ جنتا پارٹی کے سینئر رہنما ڈاکٹر کیروڑی لال مینا نے وزیر کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ مینا نے چند روز قبل وزیر اعلیٰ سے ملاقات کے بعد ہی استعفیٰ دے دیا تھا، تاہم اسمبلی کے بجٹ اجلاس کی وجہ سے حکمت عملی کے طور پر اسے خفیہ رکھا گیا۔ اب ان کے استعفے کی اطلاع سامنے آنے کے بعد پارٹی کو یہاں چیلنجز کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔
انہوں نے کہا کہ وہ دو دن سے دہلی میں تھے کیونکہ انہیں پارٹی کے قومی جنرل سکریٹری نے بات چیت کے لئے بلایا تھا، لیکن ان سے ملاقات نہیں ہو سکی۔ مینا نے کہا کہ انہیں تنظیم یا وزیر اعلیٰ سے کوئی ناراضگی نہیں ہے۔ کیروڑی لال مینا نے لوک سبھا انتخابات کے دوران کہا تھا کہ اگر وہ ان گیارہ سیٹوں سے ہار جاتے ہیں جن کی انہیں ذمہ داری دی گئی تھی تو وہ استعفیٰ دے دیں گے۔
لوک سبھا انتخابات کے نتائج سے پہلے، رجحانات میں بی جے پی کو 11 سیٹوں پر شکست ہوئی دیکھ کر مینا نے دوپہر میں ہی سوشل میڈیا پر پوسٹ کرکے استعفیٰ دینے کا اشارہ دیا تھا۔ انہوں نے اشارہ دیا کہ وہ اپنے اعلان سے پیچھے نہیں ہٹیں گے -راجستھان میں جلد ہی پانچ اسمبلی سیٹوں پر ضمنی انتخابات ہونے والے ہیں۔ ان میں جھنجھنو، کھنوسار، دوسہ، دیولی-انیارہ اور چوراسی کی سیٹیں شامل ہیں۔ کچھ دن پہلے بی جے پی نے ڈاکٹر کروڑی لال مینا کو دوسہ سیٹ کا الیکشن انچارج مقرر کیا ہے۔