صوبہ پختونخواہ میں سیکیورٹی فورسز کی کارروائی، 9 دہشت گرد ہلاک، گولہ بارود برآمد

تاثیر۲      جولائی ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

اسلام آباد، 02 جولائی: پاکستانی سیکورٹی فورسز نے صوبہ خیبر پختونخواہ کے اضلاع خیبر اور لکی مروت میں نو دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا۔ ملک میں صوبہ خیبرپختونخواہ دہشت گردوں کا گڑھ سمجھا جاتا ہے۔
انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (آئی ایس پی آر) کے مطابق سیکیورٹی فورسز نے پیر کو خیبر کے علاقے تیراہ میں خفیہ اطلاع پر کارروائی کرتے ہوئے دہشت گرد کمانڈر نجیب عرف عبدالرحمان اور دہشت گرد کمانڈر اشفاق عرف معاویہ سمیت 7 دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا۔ ان کے قبضے سے اسلحہ، گولہ بارود اور دھماکہ خیز مواد بھی برآمد ہوا ہے۔
اس کے علاوہ سیکیورٹی فورسز نے ضلع لکی مروت میں دہشت گردوں کے ٹھکانے تباہ کردیئے۔ اس کارروائی میں دو دہشت گرد مارے گئے۔ دوسری جانب ڈیرہ اسماعیل خان کی تحصیل کلاچی کے علاقے مدڑی میں ٹارگیٹڈ حملے میں ایف سی اہلکار شہید ہوگیا۔ پولیس نے اس کی شناخت 24 سالہ نعمان کے طور پر کی ہے۔

پاکستان انسٹی ٹیوٹ فار کنفلیکٹ اینڈ سیکیورٹی اسٹڈیز نے کہا ہے کہ دہشت گردوں نے گزشتہ ماہ ملک میں 69 حملے کیے ہیں۔ ان حملوں میں 60 افراد ہلاک ہوئے جن میں 33 سیکورٹی فورسز کے اہلکار، 26 عام شہری اور ایک دہشت گرد شامل تھا۔ اس کے علاوہ 65 افراد زخمی ہوئے۔