میئر سنیتا دیال ہاتھرس میں بھگدڑ میں ہلاک اور زخمی ہونے والوں کے گھر پہنچ کر تعزیت کا اظہار کیا

تاثیر۷      جولائی ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

غازی آباد، 7 جولائی : ہاتھرس میں 2 جولائی کو منعقدہ کتھا میں اچانک بھگدڑ مچنے سے تقریباً 135 لوگوں کی جان چلی گئی اور بڑی تعداد میں لوگ زخمی ہوئے۔ اس واقعہ میں غازی آباد کی ایک خاتون ہلاک اور ایک لڑکی زخمی ہوگئی۔ غازی آباد کی میئر سنیتا دیال نے اتوار کو متوفی خاتون اور زخمی لڑکی کے اہل خانہ سے ملاقات کی۔ انہیں تسلی دی۔ میئر نے وزیر اعلیٰ کی طرف سے جاری کردہ ایک چیک اور تعزیتی خط بھیمتاثرہ کے لواحقین کو دیا۔
حادثہ میں غازی آباد شہر کے لوگ بھی ہاتھرس کے ستسنگ بھولے بابا (سورج پال) کی کتھاسننے گئے تھے اور بھگدڑ کے وقت لال کوارٹر وجے نگر کی 50 سالہ خاتونوملیش دیوی بیوی سریندر کمار اور وویکا نند نگر کی 18سالہ زخمی لڑکی ماہی دختر پنکی بھی گئی ہوئی تھی اور اس حادثے میں ان کے ساتھ بھی یہ واقعہ پیش آیا ۔
اتوار کو میئر سنیتا دیال نے ایس ڈی ایم ارون دکشت اور کونسلر نیرج گوئل کے ساتھ مل کر مرنے والوں کو 2 لاکھ روپے کا چیک اور زخمیوں کے اہل خانہ کو 50 ہزار روپے کا چیک اور وزیر اعلیٰ کی راحت کے تحت تعزیتی خط سونپا۔ زخمی لڑکی اور جاں بحق ہونے والے کے اہل خانہ سے مالی امداد کی اور ان سے اظہار تعزیت کیا۔
میئر سنیتا دیال نے کہا کہ ایک انتہائی افسوسناک واقعہ پیش آیا ہے اور اہل خانہ کا غم ناقابل برداشت ہے۔ اتنی بڑی بھیڑ میں بھگدڑ مچنے کی وجہ سے لوگ نیچے گر گئے اور دیگر اپنی جان بچانے کے لیے گرے ہوئے لوگوں کے اوپر چڑھ گئے جس کی وجہ سے بڑی تعداد میں لوگ اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے۔ ہم اس شخص کو واپس نہیں لا سکتے لیکن ہم ہمیشہ متاثرہ خاندان کے ساتھ ہیں۔ وزیر اعلیٰ ریلیف فنڈ کے ذریعے خاندان کو بھی راحت دی گئی ہے۔