پانی بھر جانے کی وجہ سے مشتعل لوگوں نے قومی شاہراہ کو گھنٹوں تک بند رکھا۔

تاثیر۹  جولائی ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

انتظامیہ اور سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں نے لوگوں کو سمجھا کر جام کھلوایا۔  
ٹھاکر گنج (محیط حسن رضا)
مقامی لوگوں نے کشن گنج ٹھاکر گنج تھانہ علاقہ کے پٹرول پمپ چوک دھرم کانٹا کے پاس نیشنل ہائی وے 327E کو بلاک کر دیا۔ پانی بھرنے کے خلاف احتجاج کرنے والے لوگوں کا کہنا تھا کہ نیشنل ہائی وے کے مغربی کنارے پر پانی کی نکاسی نہ ہونے کی وجہ سے ایک درجن سے زائد لوگوں کے گھروں میں پانی داخل ہو جاتا ہے جس کی وجہ سے ہمیں آنے جانے میں شدید دشواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ مشتعل لوگوں نے NH کو بلاک کر دیا اور اطلاع کے فوراً بعد سرکل آفیسر سچیتا کماری، ایگزیکٹیو آفیسر کمار ریتوک، ٹھاکر گنج کے ایس ڈی پی او منگلیش کمار سنگھ، ٹرینی ڈی ایس پی کم پولیس اسٹیشن ہیڈ آدیتی سنگھ، کرلی کوٹ تھانہ صدر سدھارتھ دوبے، سب انسپکٹر بپن، سابق ایم ایل اے گوپال کمار اگروال، بی جے پی کے جنرل سکریٹری بجلی پرساد سنگھ، مکھیاں نمائندہ سہیل عرف راجہ، سرپنچ کے نمائندے محمد جوار الحق، سماجی کارکن کلام انصاری، شاہنواز عرف کلو، محمد ،  عتیق وغیرہ نے وہاں پہنچ کر مشتعل لوگوں کو سمجھانے کے بعد ٹریفک جام کو صاف کروایا۔ پہلے تو مشتعل افراد نے جام کھولنے سے انکار کر دیا جس کے بعد انتظامیہ نے پانی نکالنے کے لیے 24 گھنٹے کا وقت دیا اور پانی نکالنے کا مکمل کام ایک ہفتے میں کر لیا جائے گا۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ اگر ایک ہفتے میں پانی کی نکاسی نہ کی گئی تو این ایچ کو بڑے پیمانے پر بلاک کر دیا جائے گا۔ اگر این ایچ نے کام سے پہلے پانی نکالنے کا راستہ نکال لیا ہوتا تو آج یہ نتیجہ دیکھنے کو نہ ملتا۔ پانی اتنا جمع ہو گیا ہے کہ گاؤں کے وسط میں بنی پی ڈبلیو روڈ پر پانی کے بہاؤ کی وجہ سے سڑک کے دونوں اطراف کی مٹی خراب ہوتی دکھائی دے رہی ہے۔ مقامی دیہاتیوں نے NH پہنچ کر جی آر کمپنی کے خلاف مردہ آباد کے  نعرے لگائے۔