پچھلے دو دنوں میں 28,000 سے زائد یاتریوں نے امرناتھ گپھا کے درشن کئے

تاثیر۳۰      جون ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

سرینگر، یکم جولائی: ملک کے مختلف حصوں سے آئے ہوئے 28,000 سے زیادہ یاتریوں نے یاترا کے پہلے دو دنوں کے دوران امرناتھ گھپا کے درشن ک? کی، جو ہفتہ کو بالتال اور ننوان-پہلگام کے جڑواں راستوں سے شروع ہوئی تھی۔ پولیس کے ایک اہلکار نے بتایا کہ 28,534 یاتریوں نے امرناتھ گپھا پر درشن کیا جبکہ 6,461 یاتریوں کا ایک جموں کے بھگوتی نگر یاتری نواس بیس کیمپ سے یاترا کرنے کے لیے روانہ ہوا۔ انہوں نے کہا کہ یاترا کے پرامن انعقاد کے لیے سخت حفاظتی انتظامات کیے گئے ہیں۔ پولیس، سنٹرل ریزرو پولیس فورس، انڈو تبت بارڈر پولیس اور دیگر نیم فوجی دستوں کے ہزاروں سیکورٹی اہلکار راستے پر تعینات کئے گئے ہیں۔جبکہ فضائی نگرانی بھی کی جا رہی ہے۔
اطلاعات کے مطابق ننوان اور بالتل کے جڑواں بیس کیمپوں میں یاتریوں کا بہت زیادہ رش ہے۔ یاترا کے لیے ملک کے مختلف حصوں سے ہزاروں یاتری بیس کیمپ پہنچ رہے ہیں۔ دریں اثنا، 6,461 یاتریوں کا ایک اور قافلہ جموں کے بھگوتی نگر بیس کیمپ سے وادی کی طرف روانہ ہوا۔ ان میں 4831 مرد، 1223 خواتین، 14 بچے، 332 سادھو اور 61 سادھویاں (خواتین سادھو) شامل ہیں۔ ان میں سے 2,321 یاتری صبح 4:10 بجے بالتال کے لیے روانہ ہوئے اور 4,140 نے ایک گھنٹے بعد پہلگام بیس کیمپ کے لیے اپنا سفر شروع کیا۔ یہ تمام یاتری آج شام تک اپنے اپنے بیس کیمپ پہنچ رہے ہیں جہاں سے وہ کل صبح صویرے گھپا کی طرف روانہ ہوں گے۔۔