ہندوستانی خواتین کرکٹ ٹیم نے اکلوتے ٹیسٹ میں جنوبی افریقہ کو 10 وکٹوں سے شکست دی

تاثیر۳۰      جون ۲۰۲۴:- ایس -ایم- حسن

چنئی، یکم جولائی: ہندوستانی خواتین کرکٹ ٹیم نے یہاں کے ایم اے چدمبرم اسٹیڈیم میں کھیلے گئے اکلوتے ٹیسٹ میچ کے چوتھے دن پیر کو جنوبی افریقہ کو 10 وکٹوں سے شکست دی۔اس میچ میں ہندوستانی ٹیم نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے شفالی ورما (205) کی ڈبل سنچری اور اسمرتی مندھانا (149) کی شاندار سنچری کی بدولت 6 وکٹوں پر 603 رن بنا کر اپنی پہلی اننگز ڈکلیئر کردی، جس کے جواب میں جنوبی افریقہ نے اپنی پہلی اننگز میں 266 رن بنائے جس کے بعد ہندوستانی ٹیم نے اسے فالو آن دیا۔ دوسری اننگز میں افریقی ٹیم 373 رن پر آل آؤٹ ہوگئی اور بھارت کو جیت کے لئے 37 رن کا ہدف دیا۔37 رن کے ہدف کا تعاقب کرنے کے لئے بھارت کی نئی اوپننگ جوڑی شفالی ورما اور شوبھا ستیش میدان میں اتریں۔ ان دونوں نے آسانی سے ہندوستان کو بغیر کسی نقصان کے 9.2 اوور میں 10 وکٹوں سے جیت دلا دی۔

شفالی 24 اور شوبھا 13 رن بنا کر ناٹ آؤٹ رہیں۔ میچ میں 10 وکٹیں لینے والی اسنیہا رانا کو شاندار باؤلنگ پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔
جنوبی افریقہ نے دوسری اننگ میں 373 رن بنائے، کپتان لورا وولوارڈ اور سن لوئس نے سنچریاں اسکور کیں۔

اس سے قبل جنوبی افریقہ نے فالو آن کھیلتے ہوئے اپنی دوسری اننگز میں 373 رنز بنائے۔ جنوبی افریقہ کی جانب سے وولوارٹ اور سن لوئس نے شاندار سنچریاں اسکور کیں اور بالترتیب 122 اور 109 رن بنائے۔ ان دونوں کے علاوہ نادینے ڈی کلرک نے شاندار نصف سنچری اسکور کی اور 61 رن بنائے۔
بھارت کی جانب سے اسنیہا رانا، دیپتی شرما اور راجیشوری گائیکواڑ نے 2،2 جبکہ پوجا وستراکر، شفالی ورما اور کپتان ہرمن پریت کور نے 1،1 وکٹ حاصل کی۔

جنوبی افریقہ کی پہلی اننگ 266 رنوں تک محدود رہی، بھارت نے فالو اپ کیا
جنوبی افریقہ نے بھارت کے پہلی اننگز کے 603 رنز کے جواب میں اپنی پہلی اننگز میں 266 رن بنائے جس کے بعد بھارت نے افریقہ کو فالو آن دیا۔ جنوبی افریقہ کی جانب سے سنی لوئس (65) اور مارجن کپ (74) نے شاندار نصف سنچریاں بنائیں۔ ان دونوں کے علاوہ نادینے ڈی کلرک اور اینیک بوش نے 39-39 رن کی اننگز کھیلی۔

بھارت کی جانب سے اسنیہا رانا نے 8 اور دیپتی شرما نے 2 وکٹیں حاصل کیں۔
شیفالی مندھانا کے درمیان پہلی وکٹ کے لیے خواتین کی ٹیسٹ تاریخ کی سب سے بڑی شراکت

اس میچ میں بھارتی کپتان ہرمن پریت کور نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔ شفالی ورما اور مندھانا نے ہندوستان کو اچھی شروعات دی۔
شفالی نے کور کے ذریعے چوکا لگا کر اپنی لے دوبارہ حاصل کی اور کبھی پیچھے مڑ کر نہیں دیکھا۔ دونوں کے درمیان شراکت داری 292 رن تک پہنچ گئی، دونوں بلے بازوں نے بڑی سنچریاں اسکور کیں۔ شفالی کے جارحانہ اسٹروک پلے، جس میں اس کے چھکوں کی ریکارڈ توڑ جھڑپ بھی شامل تھی، نے جنوبی افریقی گیند بازوں میں مایوسی پھیلا دی۔

ون ڈے میں پہلے ہی دو سنچریاں اور 90 رن بنانے والی مندھانا کے پاس اس بار ڈبل سنچری بنانے کا موقع تھا لیکن ان کی اننگز 149 رنز پر اس وقت رک گئی جب وہ سلپ میں ڈیلمی ٹکر کی گیند پر اینری ڈرکسن کو کیچ دے بیٹھیں۔ مندھانا نے 161 گیندوں کا سامنا کیا اور 27 چوکے اور 1 چھکا لگایا۔ آؤٹ ہونے سے قبل مندھانا نے شفالی کے ساتھ پہلی وکٹ کے لئے 292 رن جوڑے، جو خواتین کی ٹیسٹ تاریخ کی سب سے بڑی شراکت داری ہے۔ تاہم اس کے بعد بیٹنگ کے لیے آنے والی شوبھا ستیش کچھ خاص نہ کر سکیں اور 15 رن کی مختصر اننگز کھیل کر نادینے ڈی کلرک کا شکار بنیں۔
تاہم جنوبی افریقہ کی راحت زیادہ دیر قائم نہ رہ سکی کیونکہ شفالی نے لگاتار دو چھکے اور ایک رن لگا کر شاندار ڈبل سنچری مکمل کی۔ ان کے مسلسل حملے اور جمائمہ روڈریگس کی تیز شراکت نے جنوبی افریقہ کی مشکلات میں اضافہ کیا، حالانکہ شفالی کے رن آؤٹ نے جنوبی افریقہ کو راحت پہنچائی۔ شفالی نے 197 گیندوں میں 23 چوکوں اور 8 چھکوں کی مدد سے 205 رن بنائے۔

کچھ ہی دیر بعد روڈریگز اپنی نصف سنچری مکمل کرنے کے بعد 55 رنز کے انفرادی سکور پر ڈیلمی ٹکر کا دوسرا شکار بنے۔
اس کے بعد کپتان ہرمن پریت کور (69) اور ریچا گھوش (86) نے شاندار نصف سنچریاں کھیل کر ہندوستان کے اسکور کو 603 رنز تک پہنچا دیا۔ اس کے بعد ہندوستان کی اننگز ڈکلیئر ہوگئی۔ دیپتی شرما 2 رنز بنانے کے بعد نات آوٹ لوٹ گئیں۔

جنوبی افریقہ کی جانب سے ڈیلمی ٹکر نے 2، نادینے ڈی کلرک، سیکھو کھونے اور ملابا نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔